روزگار کے مواقع بڑھانے کیلئے بیرونی ممالک کیساتھ روابط استوار کرنا ہوں گے

روزگار کے مواقع بڑھانے کیلئے بیرونی ممالک کیساتھ روابط استوار کرنا ہوں گے

  



اسلام آباد (آئی این پی،این این آئی )نگران وزیر اعظم جسٹس (ر)ناصر الملک نے وزارت سمندر پار پاکستانیز اور انسانی وسائل ترقی کو ہدایت کی ہے کہ پاکستانی کارکنوں کیلئے روزگار کے مواقع میں اضافے کیلئے بیرون ممالک بالخصوص خلیجی خطہ میں حکومتوں اور متعلقہ محکموں کے ساتھ روابط استوار کئے جائیں۔ انہوں نے یہ ہدایت گزشتہ روز وزارت سمندر پار پاکستانیز اور انسانی وسائل ترقی کے امور کار کے بارے میں بریفنگ کی صدارت کرتے ہوئے دی ۔بریفنگ میں وفاقی وزیر محمد اعظم خان، سیکرٹری وزارت سمندر پار پاکستانیز و انسانی ترقی ڈاکٹر محمد ہاشم پوپلز ئی، چیئرمین قومی صنعتی تعلقات کمیشن جسٹس (ر)شاکر اللہ جان اور وزارت کے سینئر حکام نے شرکت کی۔ سیکرٹری سمندر پاکستانیز ڈاکٹر محمد ہاشم پوپلزئی نے وزارت اور اس کے ذیلی محکموں کی کارکردگی اور کامیابیوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی ۔ 2013سے 2018تک کے عرصہ کے دوران حاصل ہونے والی کامیابیوں کے بارے میں بتایاگیا کہ 25ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کے علاوہ ملک کی مختلف صنعتوں میں کام کرنے والے محنت کشوں کی بہبود کیلئے30082شادی گرانٹس، 6683ڈیتھ گرانٹس،62981 وظائف اور 447194پنشن دی گئیں۔ یہ بھی بتایاگیاکہ سمندر پار پاکستانیوں کی بہبود کیلئے 5884تارکین وطن کو موت/معذوری گرانٹس، 4953ورکرز کو ہنگامی امداد کی فراہمی اور 5619شکایت کو طے کیا گیا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کارکنوں اور سمندر پار پاکستانیوں کی بہبود کیلئے ملک بھر میں 24تعلیمی ادارے کام کررہے ہیں۔ علاوہ ازیں رہائش اور صحت کی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ صوبوں کو اختیارات کی منتقلی سے پیدا ہونیوالے ایشوز پر بھی غور کیا گیا ۔ وزیر اعظم کو بتایاگیا کہ 2009ء سے 2018ء کے عرصہ کے دوران ہنر مند اور غیر ہنرمند افرادی قوت کے طور پر 10.2 ملین سمندر پار پاکستانیوں نے بیرون ملک خاص طور پر خلیجی ممالک گئے ۔

مزید : صفحہ اول


loading...