نئی انرول کمپنیوں کو حج کوٹہ الاٹمنٹ کی ری اسسمنٹ میں بے ظابطگیاں

نئی انرول کمپنیوں کو حج کوٹہ الاٹمنٹ کی ری اسسمنٹ میں بے ظابطگیاں

  



لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)وزارت مذہبی امور کو ایک اور حج سکینڈل کا سامنا،نئی انرول کمپنیوں کو حج کوٹہ کی الاٹمنٹ کی ری اسسمنٹ میں بے ضابطگیو کی نشاندہی ،ڈپٹی سیکرٹری حج پالیسی نیاز محمد،سیکشن آفیسر پرائیویٹ سکیم محمد ریاض کو تبدیل کر دیا گیا،سابق ایڈمن آفیسرحکمت اللہ خٹک جو سیکشن آفیسر ایچ جی او کے اختیارات استعمال کرتے رہے تھے انہیں بھی تبدیل کر دیا گیا تھا ان کیخلاف نیب نے تحقیقات شروع کر رکھی ہیں ،سابق وفاقی وزیر سردار محمد یوسف نے وزارت سے الوداع ہوتے ہوئے وفاقی سیکرٹری مذہبی امور کے نام تحریری خط میں حج 2018ء کیلئے نئی انرول کمپنیوں کو الاٹ کیے گئے حج کوٹہ کے معاملات سے لا تعلقی کا اظہار کرتے ہوئے خط نیب اور ایف آئی اے کو وصول کرایا تھا ،RSMکی رپورٹ کو بنیاد بنا کر پہلے پرحلے میں 26اور پھر اچانک 5کمپنیوں کو کوٹہ الاٹ کرنے پر میرٹ پر ہونے کے باوجود نظر انداز ہونیوالوں نے حج کوٹہ کی الاٹمنٹ کیلئے بنائے گئے کرائی ٹیریا کے مطابق ری اسسمنٹ کا مطالبہ کیا تھا جس پر وفاقی سیکرٹری خالد مسعود چودھری کی ہدایت پر ری اسسمنٹ کا حکم دیا گیا اور ہنگامی بنیادوں پر کام شروع کر دیا گیا ،معلوم ہوا ہے نظر انداز ہونیوالی کمپنیوں نے SECPاور FBR کے کاغذات نا مکمل ہونے ،ٹورازم سے رجسٹرڈ نہ ہونے کی نشاندہی کی اور ثبوت پیش کیے جس پر وفاقی سیکرٹری نے فوری طور پر اہم نشستوں پر کام کرنیوالوں کے تبادلوں کا حکم دیا 27جون کو سیکشن آفیسر ایڈمن عظمت علی کی طرف سے جاری کیے گئے آ فس آرڈر کے بعد ڈپٹی سیکرٹری حج پالیسی نیاز محمد کو فوری طور پر تبدیل کر کے ڈپٹی سیکرٹری(D&Z) لگا دیا گیا ان کی جگہ ڈپٹی سیکرٹری D&Z خالد جاوید کو ڈپٹی سیکرٹری حج پالیسی تعینات کیا گیا ہے ،سیکشن آفیسر حج آرگنائزر محمد ریاض کو تبدیل کر کے سیکشن آفیسر (C&C)لگا د یا گیا ہے ان کی جگہ سیکشن آفیسر (FA)جمشید اللہ کو سیکشن آفیسر پرائیویٹ سکیم لگا دیا گیا ہے ،محمد حنیف اعوان کو (C&C)سے تبدیل کر کے سیکشن آفیسر عمرہ لگا دیا گیا انہیں سیکشن آفسر مانیٹرنگ کا اضافی چارج بھی دیدیا گیا ہے ،سیکشن افسر عمرہ اعظم خان کو تبدیل کر کے سیکشن آفسر (FA) لگا دیا گیا ہے ،ڈاکٹر شبنم فردوس سیکشن آفسر کو R&Rمیں اے ڈی کی ذمہ داری دی گئی ہے،وزارت مذہبی امور میں تبدیلیوں کا ریلہ اسوقت آیا ہے جب حج آپریشن عروج پر ہے ،نا تجربہ کار افسروں کی وجہ سے سرکاری سکیم کا فلائٹ شیڈول تک تیار نہیں ہو سکا ،نگران وزیر مذہبی امور محمد یوسف شیخ بھی حج کے معاملات سے آگاہ نہیں ہے،نئی انرول کمپنیوں کو کوٹہ کی الاٹمنٹ میرٹ پر نہ ہونے پر درجنوں کمپنیوں نے عدالتوں سے رجوع کر رکھا ہے ،نگران حکومت کو نئے سکینڈل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے کیونکہ حج آپریشن نگران حکومت کے دور میں شروع ہو گا اور حج نئی حکومت کے دور میں ہو گا۔

نیا سکینڈل

مزید : صفحہ آخر