افغان صدرطالبان سے انکی مرضی کی جگہ پر مذاکرات کیلئے تیار

افغان صدرطالبان سے انکی مرضی کی جگہ پر مذاکرات کیلئے تیار

  



کابل(آن لائن)افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے وہ طالبان رہنما مولوی ہیبت اللہ اخونزادہ سے جہاں اور جب وہ کہیں براہ راست امن بات چیت کیلئے تیار ہیں۔جمعرات کو امریکی خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے انکا مزید کہنا تھا عید الفطر کے موقعے پر 3 ر و ز کیلئے ان کی حکومت اور طالبان نے علیحدہ علیحدہ غیر معمولی جنگ بندی کی،باغیوں نے عید پر جنگ بندی کے معاہدے میں توسیع سے انکار کیا،تاہم افغان حکومت نے یکطرفہ طور پر ہفتے بھر کی جنگ بندی کو بڑھا کر 10 روز تک جاری رکھا۔انکا کہنا تھا وہ ہیبت اللہ اخونزادہ کیسا تھ بات چیت کیلئے کوشاں ہیں تاکہ افغان امن ریلی کے شرکاء کے مطالبات مانے جائیں جنھوں نے رواں ماہ کے دوران جنوبی صوبہ ہلمند سے کابل تک کا 600 کلومیٹر سے زائد طویل فاصلہ طے کیا۔افغان صدر کا کہنا تھا وہ تمام فریقین سے مطالبہ کرتے چلے آ رہے ہیں کہ ملک میں عشروں سے جاری تنازع بند کریں،انہوں نے ان کے مطالبات مانے اور جنگ بندی کو 10 سے زیادہ دِنوں تک جاری رکھا اور یہ اعلان کیا کہ وہ طالبان کے رہنما مولوی ہیبت اللہ اخونزادہ کیساتھ جہاں کہیں وہ چاہیں،مذاکرات کیلئے تیار ہیں۔

افغان صدر

مزید : صفحہ آخر


loading...