جدید تقاضوں سے ہم آہنگ یکساں نصاب تعلیم رائج کرنا ناگیزیر ہے : دوست محمد خان

جدید تقاضوں سے ہم آہنگ یکساں نصاب تعلیم رائج کرنا ناگیزیر ہے : دوست محمد خان

  



پشاور( سٹاف رپورٹر)نگران وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا جسٹس (ر) دوست محمد خان نے حقیقی ماہرین پر مشتمل بااختیار قومی کمیشن برائے تعلیم تشکیل دینے اور پورے ملک میں جدید تقاضوں سے ہم آہنگ یکساں نصاب تعلیم رائج کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے انہوں نے کہا کہ اگر آج ہم نے یہ قدم نہ اُٹھایا تو مستقبل خطرے میں ہے انہوں نے اساتذہ اور شاگردوں کے مابین ٹوٹے ہوئے رشتہ احترام و شفقت کی بحالی کو ناگزیر قرار دیا اور کہا کہ اس سلسلے میں اساتذہ اور بچوں کے والدین دونوں کی طرف سے خلوص کا مظاہرہ کرنا ہوگا ہمیں اس مقدس رشتے کے بحران کے پیچھے وجوہات کا تدارک کرنا ہوگا اور بچوں کی مطلوبہ کردار سازی کیلئے خصوصی تربیت دینا ہوگی انہوں نے پشاور بورڈ کے تحت میٹرک کے سالانہ امتحانات کے پوزیشن ہولڈرز طلبہ و طالبات، ان کے اساتذہ اور والدین کیلئے وزیراعلیٰ ہاؤس میں ڈنر کا اعلان کیا ہے اور اپنی جیب سے نقد انعامات دینے کا عندیہ بھی دیا ہے وہ پشاور کے مقامی ہوٹل میں ثانوی و اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ پشاور کے تحت میٹرک کے سالانہ امتحانات 2018 میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات میں انعامات تقسیم کرنے کی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے سیکرٹری تعلیم شاہد زمان ، چیئرمین پشاور تعلیمی بورڈ ڈاکٹر فضل الرحمان، کنٹرولر امتحانات پروفیسر ملک مقصود انور اور دیگر اعلیٰ حکام نے بھی تقریب میں شرکت کی نگران وزیراعلیٰ نے امتحانات میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات، ان کے والدین اور اساتذہ کو مبارکباد دی انہوں نے طلبا کو نتائج کی آن لائن مفت فراہمی، ای ۔ڈی ایم سی(e-DMC) کے اجراء اور ای میل کے ذریعے دیگر سہولیات کی صورت میں جدت متعارف کرانے پر پشاور تعلیمی بورڈ کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ یہ سہولتیں قابل اطمینان ہیں انہوں نے مستقبل میں درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے شعبہ تعلیم کو تیز رفتار ترقی کی راہ پر ڈالنے کیلئے سنجیدہ اقدامات کی ضرورت پر زور دیا اور اس سلسلے میں قومی کمیشن برائے تعلیم تشکیل دینے کی تجویز دی جو مستقبل کے چیلنجز کو مدنظر رکھ کر تعلیم کی درجہ بندی کرے اور اہداف کا تعین کرے انہوں نے کہا کہ پورے ملک میں تعلیم کا ایک نصاب ہونا چاہیئے اور جنگی بنیادوں پر جدید طریقہ تدریس کے حوالے سے اساتذہ کی تربیت کرنے کی بھی ضرورت ہے دوست محمد نے مزید تجویز دی کہ سارے وسائل کا کم از کم چالیس فیصد تعلیم کیلئے مختص کیا جائے تب جا کر ہم مشکلات پر قابو پا سکتے ہیں دوست محمد نے کہا کہ آج کے بچوں کو مستقبل میں قومی اور بین الاقوامی سطح پر بڑے چیلنجز کا سامنا ہوگا اگر ہم اس ملک کو آگے لے جانا چاہتے ہیں تو ہمیں اپنے مستقبل کے معماروں پر سرمایا لگانا ہوگا اگر ہم ایمانداری اور اخلاص کا مظاہرہ کریں تو کوئی کام مشکل نہیں ہوتا نگران وزیراعلیٰ نے انکشاف کیا کہ وہ اپنے محدود اختیارات کے باوجود آنے والی حکومت کیلئے قابل عمل پالیسی اور روڈ میپ چھوڑ کر جائیں گے اور اسے مشتہر بھی کرینگے دوست محمد خان نے قومی زوال کی وجوہات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بد قسمتی سے آج استاد اور شاگرد کے درمیان احترام اور شفقت کا رشتہ ٹوٹ چکا ہے جو ہمارے زوال کی بنیادی وجہ ہے ایک وقت تھا کہ جب استاد اپنے شاگردوں کو اپنے بچوں کا درجہ دیتے تھے اور شاگرد اپنے اساتذہ کو والدین کا درجہ دیتے تھے مگر آج صورت حال یکسر تبدیل ہوچکی ہے اساتذہ کے احترام اور بچوں پر شفقت کا کلچر دم توڑ چکا ہے ہمیں اس رشتے کو پھر سے بحال کرنے کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ اس مجموعی عمل میں والدین خصوصاً ماں کا کردار بڑی اہمیت رکھتا ہے ماں کی گود سے سیکھی ہوئی چیز قبر تک انسان کے ساتھ جاتی ہے دوست محمد خان نے کہا کہ آج ہم جس بحران کا شکار ہیں اس سے نکلنے کیلئے سب کو اخلاص کے ساتھ اپنا کردار ادا کرنا ہوگابعد ازاں نگران وزیراعلیٰ نے نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات میں نقد انعامات تقسیم کئے ۔ شعبہ سائنس میں پشاورماڈل گر لز ہائی سکولII دلہ ذاک روڈ پشاور سے سارہ یوسف نے 1062 نمبر لے کر اول پوزیشن حاصل کی اس طرح وہ بورڈ کی ٹاپربھی رہیں شعبہ سائنس میں دوسری پوزیشن کیلئے مذکورہ سکول کی ہی طوبہ گل اور بختاور کو حقدارٹھہرایا گیا جن میں سے ہر ایک نے 1060 نمبر حاصل کئے شعبہ سائنس میں تیسری پوزیشن یونیورسٹی ماڈل سکول سے ثنیا شاہ اور پشاورماڈل گرلز ہائی سکولII دلہ ذاک روڈ سے انیبہ مسکان نے حاصل کی ان دونوں میں سے ہر ایک نے1058 نمبر حاصل کئے آرٹس گروپ میں پہلی پوزیشن کڈزسکول سسٹم گلبہار سے 958 نمبر لے کر لنتا خان نے حاصل کی دوسری پوزیشن عثمانیہ چلڈرن اکیڈمی نوتھیہ سے 939 نمبر لیکرحسین اللہ نے جبکہ تیسری پوزیشن عثمانیہ چلڈرن اکیڈمی نوتھیہ سے ہی ساجداللہ اور فاروڈ گرلز ہائی سکول پشاور سٹی سے تانیہ جمال نے حاصل کی دونوں میں سے ہر ایک نے 932 نمبر حاصل کیئے پہلی پوزیشن حاصل کرنے والوں کوفی کس 50 ہزار روپے، دوسری پوزیشن حاصل کرنے والوں کوفی کس 45 ہزار روپے جبکہ تیسری پوزیشن حاصل کرنے والوں کوفی کس 40 ہزار روپے نقد انعامات سے نوازا گیا۔

سوات(بیورورپورٹ)نگران وزیر اعلی دوست محمد خان نے کہا ہے کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے ساتھ زیادتی کسی بھی صورت برداشت نہیں کی جائیگی ،خصوصی حیثیت کے حوالے سے تفصیلات لیکر عوام کے مشکلات کا اذالہ کیا جائیگا ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے سوات ٹریڈرز فیڈریشن کے صدر عبدالرحیم کی قیادت میں فاٹا کے کارخانہ مالکان اور چیمبر ایسوسی ایشن کے عہداروں کے ساتھ ملاقات میں کیا ،اس موقع پر سوات ٹریڈرز فیڈریشن کے صدر عبدالرحیم نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن دہشت گردی ،سیلاب ،زلزلوں اور دیگر افات سے متاثرہ ضلع ہے اور یہاں کے عوام نے دہشت گردی اور ملکی بقاء کی جنگ میں بے تحاشہ قربانیاں دی ہے حکومت کو یہاں کے عوام کو ریلیف دینا چاہیں ان پر مذید بوجھ نہیں ڈالنا چاہیں انہوں نے کہا کہ فاٹا کے عوام کو ریلیف دیکر یہاں کے عوام سے مراعات چھینے گئے ہیں اور انکی خصوصی حیثیت ختم کی گئی ہے لہذا پ اس کی طرف خصوصی توجہ دیں جس پر نگران وزیر اعلی دوست محمد خان نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام نے بے تحاشہ قربانیاں کر محب الوطنی کا ثبوت دیا ہے اور ان لوگوں کے ساتھ نا انصافی نہیں ہوگی انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ دویژن کی خصوصی حیثیت کے حوالے سے تفصیلات لیکر اپ لوگوں کے مشکلات کا خاتمہ کیا جائیگا اور انکو ائینی اور قانونی تحفظ دیا جائیگا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...