ایکسائیز و تیکسیشن حکام کی نا اہلی ،ہزاروں گاڑیوں کی رجسٹریشن کا پیاں التواء کا شکار

ایکسائیز و تیکسیشن حکام کی نا اہلی ،ہزاروں گاڑیوں کی رجسٹریشن کا پیاں التواء ...

  



راولپنڈی(سید گلزار ساقی سے) ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب کے اعلیٰ افسران کی ناقص حکمت عملی کی وجہ سے پنجاب میں رجسٹریشن کارڈ جاری نہ ہو سکا، ہزاروں گاڑیوں کی رجسٹریشن کاپیاں التواء کا شکار ہو گئیں ، کروڑوں روپے وصول کر کے محکمہ ایکسائز نے مالکان کو انتظار کی لائن میں کھڑا کر رکھا ہے، مالکان چیف جسٹس ہائی کورٹ نوٹس لینے کی اپیل کرنے کا پلان بنا رہے ہیں، ادھر سائلین اپیل کرنے کیلئے وکلاء سے رابطہ کر رہے ہیں ، ذرائع کے مطابق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب نے صوبہ بھیر کے تمام اضلاع میں گاڑیاں کمپیوٹر ائزڈ کی جا رہی ہیں، تاکہ گاڑیوں کی مکمل معلومات کمپیوٹر میں محفوظ کرنے سمیت آن لائن چیکنگ کی سہولیات فراہم کی جا سکیں،مختلف اضلاع میں2007کے بعد کمپیوٹر ائزڈ نظام لاگو کیا گیا تھا ، جس پر اب تک لاکھوں گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں رجسٹرڈ کر کے پنجاب کے خزانہ میں اربوں روپے جمع کروائے گئے ، کمپیوٹرائزڈ ائزڈ رجسٹریشن کاپیوں کے بعد محکمہ ایکسائز پنجاب کے اعلیٰ افسران کئی سالوں سے محکمہ ایکسائز اسلام آباد کی طررز پر رجسٹریشن کمپیوٹرائزڈ کارڈ جاری کرنے سمیت گاڑیوں کی رجسٹریشن ٹرانسفر بائیو میٹرک کرنے کے منصوبے بنائے گئے جس پر عدم توجہ اور ایکسائز کے اعلیٰ افسران کی سستی اور نا قص حکمت عملی سے تاحال یہ منصوبے التواء کا شکار ہو گئے ، ادھر محکمہ پنجاب کے اعلیٰ افسران کی ناقص حکمت عملی اور عدم دلچسپی کے باعث پنجاب کے مختلف اضلاع میں رجسٹرڈ ہونے والی گاڑیوں کے مالکان سے کروڑوں روپے وصول کرنے کے باوجود اُن کی گاڑیوں کی رجسٹریشن کاپیاں تیار کرنے میں محکمہ ایکسائز ناکام چلا آرہا ہے، ان گاڑیوں کے مالکان سے کروڑوں روپے وصول کر کے خزانہ میں ایڈوانس جمع کروالئے گئے ، گاڑیوں کی رجسٹریشن کاپیاں اور اصل فائلیں نہ ملنے کی وجہ سے صوبہ بھر کی گاڑیوں کے ہزاروں مالکان شدید پریشانی میں مبتلا ہیں اور ایکسائز دفاتر میں چکر پہ چکر لگا کر تھک ہار گئے ہیں معلوم ہوا ہے کہ ایکسائز کے عملے سے بحث و تکرار کے دوران کئی سائلین کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس پنجاب اس معاملہ پر نوٹس لیں تاکہ آئے روز کا عارضی گاڑیوں کی رجسٹریشن کا پیوں کا جو معاملات لٹکے ہوئے ہیں چیف جسٹس نوٹس کے دوران ایکسائز پنجاب کے سیکرٹری اور ڈی جی ایکسائز کو پابند کریں کہ تاکہ بوقت گاڑیوں کی رجسٹریشن کاپیاں مالکان کو فراہم کی جا سکیں ، یہ ایک طرح کے مالکان کے حقوق ہیں ، جن حقوق کو پامال کرتے ہوئے شہریوں کو ذلیل و خوار کیا جا رہا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر