مخدوم جاوید ہاشمی کا سیاست سے دستبرداری کا اعلان لیکن دراصل اس کے پیچھے شہبازشریف کا کیا کردار تھا؟ ایسی خبرآگئی کہ سن کر چوہدری نثار بھی حیران رہ جائیں گے

مخدوم جاوید ہاشمی کا سیاست سے دستبرداری کا اعلان لیکن دراصل اس کے پیچھے ...
مخدوم جاوید ہاشمی کا سیاست سے دستبرداری کا اعلان لیکن دراصل اس کے پیچھے شہبازشریف کا کیا کردار تھا؟ ایسی خبرآگئی کہ سن کر چوہدری نثار بھی حیران رہ جائیں گے

  



ملتان (ڈیلی پاکستان آن لائن)سینئر سیاستدان جاوید ہاشمی  انتخابات سے  دستبردار ہوگئے اور اپنے کاغذات نامزدگی بھی واپس لے لیے ہیں۔

روزنامہ جنگ کے مطابق  مخدوم جاوید ہاشمی کچھ عرصہ پہلے تک یہ کہتے آئے ہیں کہ وہ وزیر بننا چاہتے ہیں نہ صدر مملکت ، ان کی اول اور آخری خواہش یہ ہے کہ وہ اسمبلی کا رکن بن کر قومی معاملات کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کرسکیں۔ اب انہوں نے اپنا زاویہ نظر بدل لیا ہے اور پریس کانفرنس کرتے ہوئے یہ اعلان کیا ہے کہ وہ اب قومی رہنما کے طور پر اپنا کردار ادا کریں گے اور قومی ایشوز پر اپنے سیاسی تجربے کی بنیاد پر قوم کو رہنمائی فراہم کریں گے۔

واقفان حال کا کہنا ہے کہ مخدوم جاوید ہاشمی کو سرتوڑ کوشش کے باوجود مسلم لیگ ن کا ٹکٹ نہیں مل سکا۔ ان حلقوں کا کہنا ہے کہ جس طرح آج کل نواز شریف چودھری نثار کو پارٹی میں قبول کرنے کیلئے تیار نہیں اسی طرح شہباز شریف کی جاوید ہاشمی کے بارے میں رائے مثبت نہیں ہے۔ وہ نہیں چاہتے کہ جاوید ہاشمی کو جنہوں نے تحریک انصاف میں جا کر نہ صرف مسلم لیگ ن بلکہ نواز شریف کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا کو پارٹی کا ٹکٹ دیا جائے۔

رپورٹ کے مطابق ایسا محسوس ہورہاتھا کہ یہ حلقہ مسلم لیگ ن کی قیادت کیلئے درد سر بن جائے گا کیونکہ مخدوم جاوید ہاشمی اس حلقہ سے دستبردار ہونے کو تیار نہ تھے جبکہ طارق رشید اور ملک رفیق رجوانہ پورا زور لگا رہے تھے کہ مخدوم جاوید ہاشمی کو اس حلقہ سے ٹکٹ نہ ملے۔ حمزہ شہباز شریف کی مداخلت سے یہ مسئلہ یوں حل ہوگیا کہ طارق رشید کو این اے 155 کی ٹکٹ دے دی گئی جبکہ آصف رفیق رجوانہ کو صوبائی حلقہ 214 کی نشست پر امیدوار نامزد کردیا گیا اور اب مخدوم جاوید ہاشمی نے بھی اپنے کاغذات واپس لے لیے ۔

مزید : سیاست /علاقائی /پنجاب /ملتان


loading...