سندھ حکومت لاڑکانہ کی طرح کراچی کوتباہ کرنا چاہتی ہے، ہم نگران حکومت کے ساتھ رابطے میں ہیں : وسیم اختر 

سندھ حکومت لاڑکانہ کی طرح کراچی کوتباہ کرنا چاہتی ہے، ہم نگران حکومت کے ساتھ ...
سندھ حکومت لاڑکانہ کی طرح کراچی کوتباہ کرنا چاہتی ہے، ہم نگران حکومت کے ساتھ رابطے میں ہیں : وسیم اختر 

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ سندھ حکومت لاڑکانہ کی طرح کراچی کو تباہ کرنا چاہتی ہے جبکہ ہم نگران حکومت کے ساتھ رابطے میں ہیں اور انہیں مسائل سے آگاہ کر رہے ہیں ۔ 

تفصیلات کے مطابق میئر کراچی وسیم اختر لیاقت آباد سی ون ایریا پہنچے جہاں افسرا ن کی جانب سے انہیں کراچی کے نالوں کی صفائی سے متعلق بریفنگ دی گئی ۔ بعد ازاں میئر کراچی کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہناتھا کہ پلاننگ کے حساب سے کام شروع کردیا ہے،کم سے کم وسائل میں مسائل حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جبکہ گزشتہ سال جومسائل تھے انہیں ختم کررہے ہیں۔عوام بھی برساتی نالوں میں کچرانہ پھینکیں،چمڑے کی فیکٹری کو سیل کراوں گا کیونکہ اس نے نالے چوک کیے،نالے پرتجاوزات موجود ہیں اورگزشتہ سالوں میں کسی نے کوئی کام نہیں کیا،اس کالونی میں پچھلے سال بھی پانی بھرا تھا اور پانی واپس جارہا تھا۔انہوں نے کہا کہ 2شفٹوں میں نالوں کی صفائی کا کام کر رہے ہیں،تمام انجینیز اور بلدیاتی نمایندوں کے ساتھ سڑکوں پر ہیں،یہی نہیں ہم نگراں حکومت سے بھی رابطے میں ہیں،نگراں وزیراعلیٰ کو تمام مسائل سے آگاہ کردیا ہے،برساتی نالوں میں گیس لیک ہورہی تھی کیونکہ کنکشن دبے ہوئے تھے۔

وسیم اختر کا کہناتھا کہ پینے کا پانی مل نہیں رہا لیکن پانی نالوں میں جارہا ہے،با رش آتے ہی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے نوٹس آجاتا ہے،بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی خود غیر قانونی کام کروا رہی ہے جبکہ واٹر کمیشن اضلاع کو پیسے دلوارہا ہے،واٹر بورڈ کو سیوریج کاپانی برساتی نالوں میں نہیں ڈالنا چاہیے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...