کورونا سے مزید 56اموات، راولپنڈی کے مزید 8علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن

      کورونا سے مزید 56اموات، راولپنڈی کے مزید 8علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن

  

لاہور، اسلام آباد، کراچی، پشاور(سٹاف رپورٹر، مانیترنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ملک بھر میں میں اتوار کے روز کورونا وائرس کے 4233 نئے کیسز اور 56 اموات رپورٹ ہوئیں۔صوبہ سندھ میں کورونا وائرس کے مزید 2 ہزار 179 نئے کیسز اور 26 اموات کا اضافہ ہوا۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے صوبے میں کیسز کی صورتحال بتاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 24 گھٹنوں کے دوران 9 ہزار 244 ٹیسٹ کیے گئے جس میں سے 2 ہزار179 کے نتائج مثبت آئے، اس طرح مجموعی کیسز کی تعداد 80 ہزار 446 تک پہنچ گئی۔انہوں نے بتایا کہ صوبے میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں صوبے میں مزید 26 افراد انتقال بھی کرگئے جس سے یہ تعداد 1269 تک پہنچ گئی ہے۔صوبہ پنجاب میں کورونا وائرس کے مزید 1322 نئے کیسز اور 17 اموات رپورٹ ہوئیں۔سرکاری سطح پر اعداد و شمار بتانے کے لیے قائم پورٹل کے مطابق صوبے میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایک ہزار 322 لوگ متاثر ہوئے جس کے بعد مجموعی کیسز کی تعداد 74 ہزار 202 ہوگئی۔اس کے علاوہ صوبے میں مزید 17 افراد زندگی کی بازی ہار گئے یوں اب تک وہاں اموات 1673 تک پہنچ گئیں۔خیبرپختونخوا (کے پی) میں کورونا وائرس کے مزید 398 کیسز اور 8 ہلاکتوں کی تصدیق ہوئی۔محکمہ صحت کے اعداد وشمار کے مطابق 398 نئے کیسز کے بعد صوبے میں کیسز کی مجموعی تعداد 25 ہزار 778 ہوگئی ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ مختلف اضلاع میں 8 افراد جان سے گئے اور ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 922 ہوچکی ہے بلوچستان کے محکمہ صحت کے مطابق صوبے میں اب تک اسکریننگ کیے گئے لوگوں کی کل تعداد ایک لاکھ ایک ہزار 441 جبکہ 48 ہزار 164 ٹیسٹ کیے گئے ہیں۔محکمہ صحت کے ترجمان ڈاکٹر وسیم بیگ کا کہنا تھا کہ آج (28 جون) کورونا وائرس کے 115 نئے کیسز سامنے آئے اور مجموعی تعداد 10 ہزار 376 ہوگئی ہے۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا وائرس نے مزید 189 افراد کو متاثر کیا جبکہ 2 افراد کی جان لے لی۔۔پوری دنیا موذی وائرس کی لپیٹ میں ہے، کورونا مریضوں کی تعداد ایک کروڑ سے بھی تجاوز کر گئی، ہلاکتیں پانچ لاکھ سے بھی بڑھ گئیں۔ برازیل میں مزید 994،میکسیکو میں 719، امریکا میں 512 اور بھارت میں 412 افراد جان سے چلے گئے۔دنیا بھر میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کر گئی۔ مہلک وائرس نے اب تک 5 لاکھ سے زائد افراد کی جان لے لی۔ دنیا بھر میں ایک روز میں ایک لاکھ 76ہزار سے زائد کورونا کے مریض سامنے ا?ئے۔ امریکا میں کورونا سے 25 لاکھ 96 ہزارافراد متاثر ہیں، 1 لاکھ 28 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ کورونا سے متاثرہ ممالک میں برازیل دوسرے نمبر پر آ گیا جہاں 13 لاکھ 16 ہزار افراد متاثر ہیں، 57 ہزار سے زائد ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔روس تیسرے نمبر پر ہے جہاں 6 لاکھ 27ہزار سے زائد کورونا کے مریض ہیں، 9 ہزار کے قریب افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ بھارت دنیا میں کورونا سے متاثر چوتھا بڑا ملک ہے، مریضوں کی تعداد 5 لاکھ 30 ہزار کے قریب پہنچ گئی۔ مرنے والوں کی تعداد 16 ہزار سے تجاوز کر گئی۔میکسیکو میں 4 ہزار 410 نئے کیسز کے ساتھ متاثرہ افراد کی تعداد 2 لاکھ 13 ہزار تک پہنچ گئی، مرنے والوں کی تعداد 26 ہزار سے تجاوز کر گئی۔ چلی میں مزید 280، پیرو میں 196 اور ایران میں 125 افراد ہلاک ہوئے۔

کورونا ہلاکتیں

لاہور، کراچی، پشاور اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) ملک بھر میں کورونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے میں عوام کی جانب سے عدم تعاون کی روش برقرار ہے، چوبیس گھنٹوں میں ایس او پیز کی سات ہزار 882 خلاف ورزیاں کی گئیں، انتظامیہ نے ہزاروں گاڑیاں، دکانیں سیل، جرمانے بھی کیے گئے۔نیشنل کمانڈ اینڈ ا?پریشن سینٹر کے اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ 20گھنٹوں میں ملک بھر میں ایس او پیز کی خلاف ورزیوں کے 7 ہزار 882 واقعات رپورٹ ہوئے، 1 ہزار 70 سے زائد مارکیٹیں سیل کی گئیں جبکہ 1ہزار 234 گاڑیوں کو جرمانہ یا تھانوں میں بند کیا گیا۔اعدادوشمار کے مطابق اسلام آباد میں 16 خلاف ورزیاں، 14 دکانیں سیل اور 2 گاڑیوں پر جرمانہ عائدکیا گیا جبکہ خیبرپختونخوا میں 3 ہزار 252 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئیں۔ 105 گاڑیاں ضبط اور 178 دکانوں کو سیل یا جرمانے کیے گئے۔پنجاب میں 2 ہزار 172 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئیں، 618 دکانیں سیل اور 816 گاڑیاں ضبط کی گئیں، آزاد کشمیر میں 390 خلاف ورزیاں، 63 گاڑیاں اور 53 دکانوں کو سیل اور متعدد کوجرمانے کیے گئے، بلوچستان میں 786 خلاف ورزیاں، 203 گاڑیاں اور 95 دکانیں سیل وجرمانے ہوئے۔اسی طرح گلگت بلتستان میں 183 خلاف ورزیاں رپورٹ ہوئیں جبکہ گلگت بلتستان میں 88 مارکیٹ اوردکانوں کو جرمانے یا سیل اور 23 ٹرانسپورٹ سیل کی گئیں۔کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کی وجہ سے راولپنڈی شہر کے مزید 8 علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کی سفارش کر دی گئی۔ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کی جانب سے چیف سیکرٹری پنجاب کوسفارش کی گئی ہے کہ راولپنڈی کے 8 علاقوں میں 30 جون سے 10 روز کے لیے اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کیا جائے۔چیف سیکرٹری کو لکھ گئے خط میں جن علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کی سفارش کی گئی ہے ان میں گلزار قائد، خیابان سرسید، ڈھوک علی اکبر، کوٹھاکلاں، مورگاہ، تخت پڑی، ننکاری بازار اور بارا مارکیٹ شامل ہیں۔ڈپٹی کمشنر کے مطابق مذکورہ علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کی سفارش ضلعی پولیس، میڈیکل ٹیموں اور تاجروں سے مشاورت کے بعد کی جا رہی ہے۔ لاہورکے مزید 7 علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن میں سختی کے باعث شہریوں کی نقل و حرکت کو محدود کر دیا گیاجس سے کورونا کیسوں میں کمی آ گئی۔ بغیرشناختی کارڈ داخلہ مکمل بند کردیا گیا،ان علاقوں میں ڈی ایچ اے، گلبرگ، ماڈل ٹاؤن، گارڈن ٹاؤن، فیصل ٹاؤن، گلشن راوی اور اندرون شہر میں سمارٹ لاک ڈاؤن میں مزید سختی کردی گئی،ان علاقوں سے 3606 کیسز رپورٹ ہوئے تھے، اندرون لاہور کے 12 دروازوں کی بھی سخت ناکہ بندی کردی گئی۔ لاک ڈاؤن پر 43 ایس ایچ اوزسمیت تین ہزار اہلکارتعینات ہیں، محکمہ داخلہ کے نوٹیفکیشن کے مطابق سیل علاقوں میں گراسری، کریانہ، آٹاچکی، فروٹ شاپس، تندور، پیٹرول پمپس، ملک شاپس،چکن شاپس اور بیکریز کھلی رہیں گی وفاقی دارالحکومت میں کورونا کیسز میں اضافہ کی وجہ سے جی نائن ٹواور تھری کوچودہ دن لاک ڈاون کے بعد ڈی سیل کردیا گیا، کمرشل ایریا جی نائن مرکزکراچی کمپنی کو (آج) پیر کو ڈی سیل کیاجائے گا۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے متعدد علاقوں میں کرونا کیسزکے باعث سمارٹ لاک ڈاون جاری ہے،ڈپٹی کمشنر اسلام آبادحمزہ شفقات نے کہا ہے کہ سمارٹ لاک ڈاون سے کورونا وائرس کا گراف نیچے جارہا ہے۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آبادمیں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے اسلام آباد انتظامیہ نے 9 انڈسٹریل یونٹس اور 10 سب سیکٹرز بھی سیل کیے ہیں۔سیکٹرجی سکس ون ٹو جی سیون ٹو جی ٹین فورغوری ٹاون فیز فور اور فائیوچوبیس جون سے سیل ہیں اسلام آباد انتظامیہ کے مطابق میں ان علاقوں میں پچھلے کئی دنوں سے اوسطا 40 کیسز فی ایریا آرہے تھے اور ان علاقوں میں 25 اموات رپورٹ ہوئی تھیں اب ان میں کمی واقعہ ہوئی ہیدوسری طرف وزارت داخلہ نے ملک بھر میں مویشی منڈیاں لگانے سے متعلق سفارشات تیار کرلیں۔تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ کی جانب سے تیار کردہ سفارشات میں تجویز کی گئی ہے کہ منڈیاں ملک کے تمام بڑے شہروں میں لگائی جائیں گی، منڈیاں شہروں کے داخلی یاخارجی راستوں پر لگائی جاسکیں گی۔سفارشات میں شہروں میں سرعام مویشی فروخت کرنے پر مکمل پابندی کی تجویز کی گئی ہے، منڈی کے داخلی راستوں پر سیکیورٹی اہلکار تعینات کیے جائیں گے۔عید کی نماز کے لیے علما سے مشاورت کے بعد تجاویز پر عمل کیا جائے گا۔ جبکہ قربانی اور جانوروں کے فضلے کو ٹھکانے لگانے کے حوالے سے بھی سفارشات تیار ہے۔

لاک ڈاؤن

مزید :

صفحہ اول -