لاہو ر، فیصل آباد میں قاتل ڈور نے 2گھرا جاڑ دیئے، 6سالہ بچی، نوجوان جاں بحق

  لاہو ر، فیصل آباد میں قاتل ڈور نے 2گھرا جاڑ دیئے، 6سالہ بچی، نوجوان جاں بحق

  

لاہور(خبر نگار،کرائم رپورٹر) لاہور کے علاقے ساندہ میں گلے پر ڈور پھرنے سے 6سالہ بچی جاں بحق ہوگئی۔تفصیلات کے مطابق شہری محمد عمران اپنی فیملی کے ہمراہ موٹر سائیکل پر ٹاؤن شپ میں رشتے داروں سے ملنے کے بعد گھر واپس شاہدرہ جا رہا تھا کہ بند روڈ ڈبل سڑکاں کے پاس موٹر سائیکل پر آگے بیٹھی بچی کی گردن پر پتنگ ڈور پھر گئی۔ کمسن حریم کو منشی ہسپتال لایا گیا مگر طبی امداد سے قبل ہی بچی نے والدین کے ہاتھوں میں جان دے دی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے واقعہ پر گہر ے دکھ اورافسوس کا اظہار کرتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کرلی اور غفلت کے ذمہ داروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم دیاہے۔ڈی آئی جی آپریشنز اشفاق خان نے ایس ایچ او ساندہ انسپکٹر شرجیل ضیاء کو فوری معطل کرکے لائن حاضر کرتے ہوئے کہا ہے کہ پتنگ بازی سے کسی ہلاکت کی صورت میں متعلقہ افسرکے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔اہل علاقہ نے ڈبل سڑکاں کو بلاک کر کے پتنگ بازی کے بڑھتے ہوئے واقعات کے خلاف زبردست احتجاج کیااور وزیراعلیٰ پنجاب سے ڈور کے باعث بڑھتی ہلاکتوں کا نوٹس لینا کا مطالبہ کیا ہے۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ سات روز قبل شمالی چھاؤنی کے علاقے میں قاتل ڈور نے نوجوان کی جان لے لی جبکہ اب ایک ہفتہ کے بعد اتوار کو ہی ساندہ میں ڈور نے 6سالہ حریم فاطمہ کی جان لے لی ہے۔مکینوں کا کہنا تھا کہ پولیس پتنگ بازی کی روک تھام میں ناکام ہو کر رہ گئی ہے۔جس کی وجہ سے اے روز قاتل ڈور کسی نہ کسی بیگناہ شہری یا کم سن اور معصوم بچے کی جان لے لی جاتی ہے جوکہ سراسر زیادتی ہے۔ مکینوں کا کہنا تھا کہ وزیر اعلی پنجاب نوٹس لے کر اس قاتل کھیل پر لگائی گئی پابندی کو یقینی بنائیں۔

بچی جاں بحق

بچی جاں بحق

فیصل آباد(کرائم رپورٹر)فیصل آباد میں پتنگ بازی کے باعث اٹھارہ سالہ نوجوان گلے پر ڈور پھرنے سے لقمہ اجل بن گیا۔بتایاگیاہے کہ پیپلز کالونی کے علاقہ میں چک 240 گ ب جڑانوالہ کا رہائشی اٹھارہ سالہ حمزہ موٹرسائیکل پر جارہاتھا کہ گلے پر ڈور پھرنے سے شدید زخمی ہوگیا اس کو شدید زخمی حالت میں سول ہسپتال منتقل کردیاگیاجہاں وہ دوران علاج دم توڑ گیا۔

نوجوان جاں بحق

مزید :

صفحہ اول -