چند سال کے دوران 250 کے قریب افراد قتل

چند سال کے دوران 250 کے قریب افراد قتل

  

ملک میں گرمی کی حدت میں اضافے کے ساتھ ہی قتل وغارت گری‘ لڑائی جھگڑے کی وارداتوں میں حیران کن طور پر اضافہ ہو گیا ہے لوگوں میں عدم برداشت اور بات بات پر لڑائی جھگڑا‘ مارکٹائی اور فائرنگ کے واقعات معمول بن گئے ہیں جرائم تو رہتی دنیا تک قائم و دائم رہے گا کسی حوالے سے بھی سو فیصد کرائم فری کوئی بھی ملک یا شہر نہیں مگر ڈی پی او گجرات سید توصیف حیدر انکی ٹیم کے مرکزی ستون جن میں چوہدری اسد گجر‘ پی آر او‘ محمد عمران سوہی پی ایس او‘ الخدمت سینٹر اور سی سی ٹی وی یونٹ کے انچارج اعجاز احمدسرفہرست ہیں جو کسی بھی وقوعہ کے بارے میں انتہائی جانفشانی کے ساتھ ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بناتے اور میڈیا کو باخبر رکھتے ہیں‘ ویسے بھی جب سے پنجاب پولیس نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال شروع کیا ہے ملزمان کی واردات کے بعد فورا گرفتاری انتہائی آسان بن چکی ہے سید توصیف حیدر نے کرائم کی بیخ کنی کے حوالے سے ڈویژن بھر میں بہترین ڈی پی او کا اعزاز حاصل کیا ہے چوری ڈکیتی اور قتل و غارت گردی کرنے والے یہ تصور کر بیٹھتے ہیں کہ انہیں کوئی نہیں دیکھتا ایک طرف تو خداوند کریم جو ہر چیز سے باخبر ہے ایسا گناہ کرنیوالوں کو تو دیکھتا ہی ہے مگر اب سی سی ٹی کیمروں کے ساتھ ملزم کی فوری گرفتاری اور شناخت ممکن بن چکی ہے گجرات کی یہ بدقسمتی رہی ہے کہ عدالتوں میں اپنے مقدمات کی پیروی کرنیوالوں کو یہ خدشہ لاحق رہتا ہے کہ کہیں ان کے مخالفین واپسی پر انکا کام تمام نہ کر دیں ایک مختاط اندازے کے مطابق عدالتوں میں تاریخ پیشی پر آتے جاتے فائرنگ کے واقعات میں چند سالوں کے دوران 250 کے قریب افراد قتل ہو چکے ہیں اجتماعی قتل کی وارداتیں بھی رونما ہوئیں ضلع کے 23تھانہ جات کی حدود میں 3سوکے قریب خاندانوں میں دشمنیاں قتل وغارت گری کا باعث بنیں گجرات میں ہر ماہ درجن سے زائد افراد کو مختلف وجوہا ت کی بنا کر موت کے گھاٹ اتار دیا جاتا ہے‘ خاندانی دشمنیوں کے علاوہ گھریلو تنازعہ‘ پسند کی شادی‘ جائیداد اور غیرت کے نام پر بھی قتل کی وارداتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے چند یوم قبل ایسے ہی دو خطرناک متحارب فریقین سیشن کورٹ سے تاریخ پیشی بھگتنے کے بعد علی الصبح واپس جا رہے تھے کہ غریب پورہ روڈ پر دونوں فریقین کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا دونوں گروپوں کے مسلح افراد نے اپنی بندوقوں کے منہ ایک دوسرے پر کھول دیے فائرنگ کے تبادلے میں غریب پورہ گرلز ہائی سکول کے باہر صفائی کرنیوالا غریب‘ محنت کش مسیحی خاکروب عباس مسیح زد میں آ گیا اور کئی گولیاں اسکے جسم میں یکے بعد دیگر پیوست ہو گئیں خون میں لت پت اور تڑپتے ہوئے سینٹری ورکر کو موقع پر چھوڑ کر ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے سینٹری ورکروں نے ایمرجنسی‘ پولیس اور دیگر ریاستی اداروں سے فوری مدد طلب کرنیکی ہر ممکنہ کوشش کی ناکامی پر خون میں لت پت سینٹری ورکر کو ایمبولنس نہ ملنے پر کوڑا کرکٹ ڈالنے والی ہتھ ریڑی میں ڈال کر غریب پورہ چوک تک لایا گیا جہاں سے ہسپتال منتقل کرنے سے اسکا زیادہ خون بہنے سے موت ہو گئی میونسپل کارپوریشن کا خاکروب مقتول عباس مسیح جو دیگر ساتھیوں عباس مسیح‘ اندریاس اور میر نعمان وغیرہ کے ہمراہ گرلز ہائی سکول محلہ غریب پورہ کے باہر صفائی کررہا تھا کو کیا معلوم تھا کہ یوں اچانک موت سے اسکا آمنا سامنا ہو جائیگا اور ہنستا بستا گھر ماتم کدے میں تبدیل ہوگا تھانہ بی ڈویژن پولیس نے مقتول کے قریبی عزیز محلہ کالوپورہ کے رہائشی میونسپل کارپوریشن کے سینٹری سپروائزر ظہیر چاند کی رپورٹ پر ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیاڈی ایس پی سٹی رضا حسنین اعوان نے صحافیوں کو واقعہ کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ملزمان کی گاڑیوں کے نمبر کورٹ روڈ‘سیشن عدالت‘ حسن چوک اور محلہ غریب پورہ میں لگائے گئے سیکیورٹی کیمروں کی فوٹیج کی مدد سے حاصل کیے گئے جس کے بعد شہرکے داخلی و خارجی راستوں پر ناکہ بندی کر کے سرچ آپریشن اور پیچھا کر کے4 ملزمان کو گرفتار کیا جا چکا ہے صابووال کے ملزمان میں خاندانی دشمنی چل رہی تھی تاریخ پیشی سے واپسی پر غریب پورہ میں دونوں گروپوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں پچیس سالہ سینٹری ورکر زد میں آگیا دوسری طرف کارپوریشن ملازم عباس مسیح کے تمام قاتلوں کی گرفتاری کیلئے متحدہ یونین کی طر ف سے گجرات پولیس کو3یوم کا الٹی میٹم ددیا گیا ہے متحدہ یونین کے عہدیداروں اور اراکین نے واقعہ کو ظلم کی بدترین داستان قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ مقتول عباس مسیح کو ناحق قتل کر کے ظلم کیا گیا تین یوم میں تمام قاتل گرفتار نہ ہوئے تواحتجاج پر مجبور ہونگے یہ امر قابل ذکر ہے ایس ایچ او تھانہ بی ڈویژن عدنان احمد اور آصف علی انچارج خدمت کاؤنٹر تھانہ بی ڈویژن گجرا ت کو بھی چار ملزمان کی گرفتاری میں نمایاں کردار ادا کرنے پر اعلی حکام کی طرف سے شاباش دی گئی ہے۔

٭٭٭

مزید :

ایڈیشن 1 -