بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے تیمرگرہ میں کا روبار زندگی مفلوج

بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے تیمرگرہ میں کا روبار زندگی مفلوج

  

تیمرگرہ(بیورورپورٹ)بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے تیمرگرہ میں کا روبار زندگی مفلوج، تاجروں نے احتجاج کی دھمکی دیدی بجلی کی بندش تاجروں کی معاشی قتل کے مترادف ہے اس حوالے سے انجمن تاجران تیمرگرہ کے صدر حاجی انوارلدین کی صدارت میں ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں جنرل سیکرٹری حاجی لا ئق زادہ، حاجی اطیع اللہ، حاجی عبدالرشید، حاجی حسین اللہ، شیخ عیسی محمد سمیت کثیر تعداد میں تاجروں نے شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر انجمن تا جران تیمرگرہ حاجی انوارلدین نے کہا کہ محکمہ واپڈا نے کا فی عرصہ سے تیمرگرہ کے ایک لاکھ 32ہزار اور 66کے وی لائنز پر غیر اعلا نیہ اور ظا لمانہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ شروع کیا ہے جس کی وجہ سے تیمرگرہ با زار اور مقامی آبادی شدید متاثر ہوکر کا روبار زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے شدید گرمی میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے تاجروں کے مشکلات میں اضافہ کیا ہے انھوں نے کہا کہ ایک توپہلے کو رونا کی وجہ سے مسلسل دو ماہ کی لاک ڈاون سے اور اب ہفتہ اور اتوار کے روز سمارٹ لاک ڈاون جبکہ جمعہ کو تاجروں کی اپنی چھٹی سے تیمرگرہ بازار بند ہونے سے تا جربرادری شدید متاثر ہوکر ان کا کار وبار تباہ ہوکر رہ گیا ہے جبکہ رہی سہی کسر اوپر سے بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لو ڈ شیدنگ نے پورا کردی انھوں نے کہا کہ تاجروں کو کمر شل ریٹ پر بجلی دی جاتی ہے لیکن اس کے با وجود لو ڈ شیڈنگ کی وجہ سے انہیں بجلی نہیں دی جارہی جوکہ ظلم اور نا انصافی اور ان کا معاشی قتل کے مترادف ہے انھوں نے دھمکی دی کہ اگر بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو تاجر برادری شدید احتجاج پر مجبور ہوگی جس کی زمہ داری محکمہ واپڈا کے حکام پر عائد ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -