سائنس کالج اورعوام کے مفاد میں دی گئی درخواست میراجرم، راؤ مظہر الاسلام

  سائنس کالج اورعوام کے مفاد میں دی گئی درخواست میراجرم، راؤ مظہر الاسلام

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) معروف سیاسی وسماجی رہنما یونین کونسل 5 کے سابق چیئرمین راؤ مظہر الاسلام، رانا محمد شبیر خان، پروفیسر رحمت علی چوہان،حاجی شیر محمد حیدری ہراج نے معززین علاقہ ڈاکٹر احمد یار بھٹہ، ملک حق نواز کھادل، ملک قادربخش، حیات خان(بقیہ نمبر42صفحہ6پر)

بلو چ، ملک اختر وینس، رانا سردار علی، عبد الغفار باسط، ملک عبد الرحمن، نصیر احمد بٹ، افشین خان حاجی اللہ بخش کھوکھر، حاجی اسرار گیلانی، عبد الصمد خان، راؤ اکبر خان، الیاس غوری، شمیم احمد، شریف خان پٹھان، حاجی عبد الرحیم، محمد اشرف فوجی، سجاد حسین شاہ، راؤ محمد بلال ودیگر کے ہمراہ پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ حلفاً کہتا ہوں کہ بوسن روڈ پر واقع سائنس کالج کے مفاد اور عوام الناس کے لئے بند راستہ میں ایک انچ کا بھی میرا فائدہ حاصل ہو تو اپنی ساری پراپرٹی سائنس کالج کے حوالے کردوں گا اپنے اوپر بے بنیاد الزامات لگانے والوں کے خلاف 5کروڑ کا ہتک عزت کا دعوی جلد دائر کروں گا سائنس کالج اور عوام الناس کے مفاد کے لئے دی گئی درخواست میرا جرم بن گیا حالانکہ کمشنر ملتان نے مذکورہ جگہ کا معائنہ کیااور ہمارے موقف کی تائید کی راؤ مظہر الاسلام نے مزید کہا کہ مذکورہ علاقہ میں پانچ سرکاری سکولز جونئیر ماڈل ہائی سکول، لیبارٹری ماڈل ہائر سکینڈری سکول، چاہ منشی والہ سکول، گلشن مہر سکول، چاہ کوڑے والہ سکول اور سائنس کالج ہیں اور ان سب کا اتفاق کالونی کی مین گلی جو کہ تقریباً 12سے 15فٹ ہے سکولز سے چھٹی پر طلبہ و طالبات کا رش اس گلی پر ہوتا ہے جبکہ اس گلی پر گلشن مہر، الیاس ٹاؤن، چاہ بجے والہ، العطا کالونی، یاسین کالونی، غازی آباد، اشرف گارڈن وغیرہ علاقہ جات کا رش رہتا ہے جس کی وجہ سے کئی کئی گھنٹے گلی بلاک رہتی ہے کیونکہ اس گلی کے سامنے بوسن روڈ پر یوٹرن ہے انہوں نے مزید کہا کہ سائنس کالج کا رقبہ دوحصوں میں ہے ایک حصہ اے میں تدریس کا عمل جبکہ دوسرے حصہ بی میں مسجد، البیرونی ہاسٹل سائنس کالج، کوارٹرز سائنس کالج، سرکاری کوٹھیاں اور کالج کا رقبہ موجود ہے حصہ اے تدریس والے حصہ سے حصہ بی میں جانے کے لئے اتفاق کالونی کی رش والی گلی کا سہارا لینا پڑتا ہے انہوں نے کہا کہ شمالی سمت عوامی بلڈنگ لائن کے ساتھ علاقہ جات کی مین سیوریج لائن عرصہ دراز سے گزر رہی ہے اور یہ راستہ عرصہ 40سال سے عوام الناس کے لئے کھلا تھا لیکن تقریباً تین سال پہلے یہ راستہ دہشت گردی کی آڑ میں بند کردیا گیا جس سے اداروں کے ساتھ ساتھ سائنس کالج کا بڑا نقصان ہوا سرکاری مسجد ویران ہوگئی، سرکاری ہاسٹل برباد ہو گیا اسی طرح سرکاری کوارٹرز، کوٹھیاں غیر آباد اور برباد ہوگئیں جس کی وجہ سے گورنمنٹ کو اربوں روپے کا نقصان پہنچ رہا ہے جبکہ ویران حصہ میں پرائیویٹ ہاسٹلز اور اکیڈمیاں بن گئیں جس سے پروفیسر صاحبان فائدے اٹھارہے ہیں انہوں نے کہا کہ بحالی راستہ کے لئے سابق وزیراعلی کے بعد وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کو بھی درخواست دی کہ جو علاقائی سیوریج لائن ہے اور وہ عوامی بلڈنگ لائن کے ساتھ ہے اور کالج کے انتہائی شمالی سمت سیوریج لائن پر سڑک بنادی جائے وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار البیرونی ہاسٹل سائنس کالج میں دوران تعلیم قیام پذیر رہے انہوں نے کہا کہ ہم امید رکھتے ہیں کہ وزیراعلی پنجاب سے توقع رکھتے ہیں کہ وہ اس سلسلے میں مذکورہ ادارہ ہذا اور عوام الناس کے مفاد کے سلسلے میں بحالی راستہ کے لئے سنجیدگی سے نوٹس لیں گے جس سے سب سے زیادہ فائدہ سائنس کالج کو پہنچے گا اور سرکاری مسجد،سرکاری ہاسٹل آباد ہوجائیں گے اور کالج کو بھی ماہانہ لاکھوں کی آمدنی ہو گی اور غریب والدین کے سر سے پرائیویٹ ہاسٹلز کی بھاری فیسوں کا بوجھ ختم ہو جائے گا جبکہ سرکاری کوٹھیاں اور کوارٹرز بھی آباد ہو جائیں گے اور رش کی وجہ سے عوام الناس میں آئے روز لڑائی جھگڑے بھی ختم ہوجائیں گے۔

مظہرالاسلام

مزید :

ملتان صفحہ آخر -