پاکستان سٹاک ایکس چینج کی حدود میں فائرنگ، دستی بم حملہ ، چاروں دہشتگرد ہلاک، سیکیورٹی گارڈز سمیت پانچ افراد شہید، کم از کم سات افراد زخمی ، حملہ کمپائونڈ پر کیا گیا: سٹاک ایکسچینج اعلامیہ

پاکستان سٹاک ایکس چینج کی حدود میں فائرنگ، دستی بم حملہ ، چاروں دہشتگرد ...
پاکستان سٹاک ایکس چینج کی حدود میں فائرنگ، دستی بم حملہ ، چاروں دہشتگرد ہلاک، سیکیورٹی گارڈز سمیت پانچ افراد شہید، کم از کم سات افراد زخمی ، حملہ کمپائونڈ پر کیا گیا: سٹاک ایکسچینج اعلامیہ

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سٹاک ایکسچینج کی حدود میں حملے کی کوشش کرنیوالے چاروں دہشتگرد مارے گئے جبکہ ان سے مقابلے میں چار سیکیورٹی گارڈ اور ایک پولیس کا سب انسپکٹر شہید ہوگیا، فائرنگ کے نتیجے میں کم ازکم سات افراد زخمی ہوئے ہیں جو سول ہسپتال میں منتقل کیے گئے جس کی تصدیق ایس ایس پی سٹی مقدس حیدر نے کی ۔ انہوں نے بتایا کہ ایک افسر کی شہادت کے علاوہ پولیس کا ایک آفیشل زخمی بھی ہے ، پولیس کے مطابق ہلاک ہونیوالوں میں چار دہشتگرد شامل ہیں، وہ دستی بم حملے کے بعد پارکنگ کے ذریعے اندر جانے کی کوشش کررہے تھے،  دہشتگرد  کار میں آئے اور ان کے قبضے سے گولہ بارود اور جدید اسلحہ بھی تحویل میں لے لیاگیا،  آج کاروباری ہفتے کا پہلا دن ہے ، دو ہزار کے قریب لوگ موجود تھے ،سندھ رینجرز کے مطابق سٹاک ایکسچینج حملے میں ملوث تمام افراد مارے جاچکے ہیں، کلیئرنس آپریشن جاری ہے ۔سٹاک ایکسچینج کے اعلامیہ کے مطابق حملہ  پاکستان سٹاک ایکسچینج کے کمپائونڈ میں کیا گیا، صورتحال کنٹرول میں ہے ،  تفصیلی صورتحال سے کچھ دیر بعد آگاہ کیا جائے گا۔ 

 میڈیا رپورٹس کے مطابق حملہ آوروں نے کسی سیکیورٹی ایجنسی کی وردیاں پہن رکھی ہیں،  واقعے کے بعد آئی آئی چند ریگر روڈ بند کردیا گیا۔  پولیس کارروائی میں سامنے آنیوالے چاروں دہشتگرد مارے گئے ، ممکنہ طورپر ان کے کور میں کچھ لوگ ہوتے ہیں، ان کی تلاش کیلئے سرچ آپریشن جاری ہے  جس میں مسلح افواج کے اہلکار بھی شامل ہیں، اس کے قریب سٹی ریلوے کالونی وغیرہ جانیوالے راستوں پر بھی تلاشی کا عمل جاری ہے ، دستی بم حملے کے بعد فائرنگ کرتے ہوئے حال میں دو افراد داخل ہوگئے تھے تاہم ان کے بیک میں موجود دو دہشتگرد دروازے پر ہی مارے گئے ، گاڑی میں سی سی ٹی وی کی مدد سے چاروں دہشتگردوں کی موجودگی کی تصدیق ہوئی تھی جو چاروں مارے جاچکے ہیں۔ سٹاک ایکسچینج کی پوری عمارت کو سیل کردیا گیا ، وہاں موجود لوگوں کو شناخت کے بعد  نکال لیا گیا جبکہ بڑی تعداد میں موجود ایمبولینسوں کو بھی موقع سے ہٹا دیا گیا۔ 

اے آروائے کے مطابق حملے کے بعد گاڑیوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے ، سٹاک ایکسچینج کے باہر دستی بم حملے  کیا گیا،سیکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ اس حملے سے ایسا لگتا ہے کہ حملہ آوروں نے پہلے رائیکی کی جس کے بعد پوری عمارت پر دھاوا بولا جانا تھا لیکن سیکیورٹی اداروں نے یہ کاوش ناکام بنادی، انٹیلی جنس اطلاعات ایسی تھیں کہ سائوتھ زون میں حملہ ہوسکتاہے لیکن ایسا واضح نہیں تھا کہ ہدف سٹاک ایکسچینج ہی ہوسکتی ہے ۔ 

ذرائع نے بتایا کہ دہشتگردوں کے پاس فولڈنگ بیگز تھے جو اسلحہ سے بھرے تھے، ٹی ٹی پستول اور اے کے 47 سے سیدھی فائرنگ کرتے آرہے تھے ۔ 

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -