سٹاک ایکسچینج حملہ، ملک دشمنوں کو ٹھکانے لگانے والے اہلکاروں کا بھی پتہ چل گیا

سٹاک ایکسچینج حملہ، ملک دشمنوں کو ٹھکانے لگانے والے اہلکاروں کا بھی پتہ چل ...
سٹاک ایکسچینج حملہ، ملک دشمنوں کو ٹھکانے لگانے والے اہلکاروں کا بھی پتہ چل گیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)کراچی سٹاک ایکسچینج پر ملک دشمنوں کا حملہ ناکام بنا دیا گیا ہے اور اب دو حملہ آوروں کو موت کے گھاٹ اتارنے والے اہلکاروں کی تصاویر اور نام بھی سامنے آگئے ۔

سی ٹی ڈی کے سابق سربراہ اور سابق آئی جی پنجاب خالد فاروق نے بتایا کہ "ریپڈریسپانس فورس کے پولیس کانسٹیبل خلیل نے کراچی سٹاک ایکسچینج پر حملہ کرنیوالے دہشتگردوں کوموت کے گھاٹ اتارا، اس کیساتھ پولیس کانسٹیبل محمد رفیق تھا"۔

دوسرےاہلکار کی تصویر بھی شیئرکرتے ہوئے انہوں نے لکھا کہ" ایک اور ہیرو"

آپریشن کے بعد گفتگو کرتے ہوئے پی آر ایف کے اہلکاروں کو یہ کہتے سنا جاسکتا ہے کہ " ایک کو نشانہ بنایا جو مر گیا، اس کے بعد کہا گیا کہ ایک بندہ زندہ ہے جو ہم پر فائرنگ کررہا ہے ، وہ دو حملہ آور آگے چلتے گئے، ایک فائرنگ اور دوسرا دستی بم پھینک رہا تھا، ایک انہیں کور دے رہا تھا، ایک کو ہاتھ پر گولی ماری تو اس کا ویپن نیچے گر گیا، بم کی پن نکالنے والا تھا کہ اس کے سرکو نشانے پر لے لیا"

ایک اور اہلکار نے بھی بتایا کہ" ایک منٹ میں نے وقفہ لیا، دوبارہ پوزیشن سنبھال کر دیکھا تو وہ  سامنے کسی اور جگہ کو نشانہ بنا رہا تھا، پھر میں نے بھی اس کے سرمیں گولی مار دی"۔

مزید :

قومی -