کراچی کی طرز پر لاہور سمیت پنجاب کے تین شہروں میں بھی حملوں کا خدشہ، سیکیورٹی الرٹ

کراچی کی طرز پر لاہور سمیت پنجاب کے تین شہروں میں بھی حملوں کا خدشہ، سیکیورٹی ...
کراچی کی طرز پر لاہور سمیت پنجاب کے تین شہروں میں بھی حملوں کا خدشہ، سیکیورٹی الرٹ

  

لاہور( لیاقت کھرل) قانون نافذ کرنے والے اداروں اور محکمہ داخلہ پنجاب نے رپورٹ دی ہے کہ کراچی کی طرز پر لاہور سمیت پنجاب کے تین بڑے شہروں میں دہشت گردی کے واقعات ہو سکتے ہیں اور ان شہروں میں دہشت گردوں کی موجودگی کے بارے اہم معلومات ملی ہیں جس پر سیکیورٹی اداروں کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے ۔

سٹاک ایکسچینج سمیت گورنر ہاؤس ، پنجاب اسمبلی سمیت عدالتوں اور اہم مقامات کی سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے اور رینجرز کی خدمات حاصل کر لی گئی ، جبکہ کمانڈوز سمیت ایلیٹ فورس کو سیکیورٹی کے لئے ذمہ داری سونپ دی گئی ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اہم مارکیٹوں ، شاپنگ مالز اور وزیراعظم امداد رقوم کے ریلیف سنٹروں پر بھی اجتماعات سے روک دیا گیا ہے اور سیکیورٹی حساس اداروں کے سپرد کر دی گئی ہے ۔

دوسری جانب لاہور میں دہشت گردی کے ممکنہ واقعات کے پیش نظر داخلی اور خارجی راستوں پر سیکیورٹی سخت کر دی گئی ہے اور سیف سٹی کے کیمروں سمیت سیکیورٹی کیمروں کی درستگی کا عمل شروع کر دیا گیا ہے جس میں اہم مقامات پر کیمروں کے ذریعے سیکیورٹی کا جائزہ لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ وزیر اعلیٰ ہائوس اور چیف سیکرٹری پنجاب سمیت آئی جی پولیس کے دفتر میں مرکزی کنٹرول روم قائم کر دیا گیا ہے اور اہم مقامات پر تعینات سیکیورٹی اہلکاروں کی بھی مانیٹرنگ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

اس حوالے سے پنجاب پولیس کے ترجمان اور ایڈیشنل آئی جی انعام غنی نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ کراچی میں واقعہ کے بعد لاہور سمیت پنجاب کے اہم شہروں میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے اس میں قانون نافذ کرنے والے اداروں اور محکمہ داخلہ پنجاب کی رپورٹ کے مطابق سیکیورٹی کے لئے ایس او پیز تیار کر کے پلان کو حتمی شکل دے دی گئی ہے ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -