”شروع میں تین چار دن مشکل تھے لیکن پھر۔۔۔“کورونا سے صحت یاب ہونے والے شاہد آفریدی نے اپنی بیماری کے دنوں کے حالات بیان کردئیے

”شروع میں تین چار دن مشکل تھے لیکن پھر۔۔۔“کورونا سے صحت یاب ہونے والے شاہد ...
”شروع میں تین چار دن مشکل تھے لیکن پھر۔۔۔“کورونا سے صحت یاب ہونے والے شاہد آفریدی نے اپنی بیماری کے دنوں کے حالات بیان کردئیے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لا ئن)ساری قوم کا شکریہ ادا کروں گا جس نے مجھے اور میرے پورے گھروالوں کو دعاو¿ں میں یاد رکھا لیکن مجھے ایسی کوئی علامات نہیں تھیں'۔کورونا وائرس سے متاثر ہونے سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ 'جس دن ہوا تھا اس کے بعد تین چار دن تھوڑے مشکل تھے جس کے بعد کافی بہتری آرہی تھی لیکن میں نے شروع کے دو تین دن کے علاوہ قرنطینہ نہیں کیا'۔

نجی نیوز چینل جیو نیوز کے پروگرام میں ان کا کہنا تھا کہ جب بہتری آئی تو میں کمرے سے باہر آیا اور اپنے معمولات اور سرگرمیاں بحال کردیں کیونکہ بستر پر لیٹا رہتا تو میرے لیے مشکل ہوجاتا اس لیے میں 100 فیصد تو نہیں 50 فیصد ٹریننگ کررہا تھا۔سابق کپتان نے کہا کہ ٹریننگ شروع کی تو مجھے بھوک لگ رہی تھی اور کھانا کھانے کو دل چاہتا تھا کیونکہ شروع میں ایک دو دن کھانے میں ذائقہ نہیں آرہا تھا'۔انہوں نے کہا کہ 'میں خود ہی اپنا ڈاکٹر بن گیا تھا، فاصلے اور صفائی کے حوالے سے احتیاط کرنے کی سخت ضرورت ہے۔شاہد آفریدی نے کورونا وائرس سے متعلق کہا کہ 'یہ ایک ایس بیماری ہے کہ اس کو بالکل سرپر بھی نہیں چڑھانا چاہیے لیکن ساتھ میں احتیاط بہت ضروری ہے'۔دور دراز علاقوں میں آگاہی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ 'مجھے شک تھا کہ یہ ہوگا لیکن شکر ہے شروع کے دنوں میں نہیں ہوا ورنہ بہت سارے لوگ متاثر ہوتے کیونکہ میں راشن تقسیم کرنے گیا تھا اور تین یا ساڑھے تین ماہ بعد میں متاثر ہوا۔

مزید :

کھیل -