فیس بک بڑی مشکل میں، پیپسی اور یونی لیور سمیت بڑی بڑی کمپنیوں نے سوشل میڈیا سائٹ پر اشتہارات دینا بند کردئیے

فیس بک بڑی مشکل میں، پیپسی اور یونی لیور سمیت بڑی بڑی کمپنیوں نے سوشل میڈیا ...
فیس بک بڑی مشکل میں، پیپسی اور یونی لیور سمیت بڑی بڑی کمپنیوں نے سوشل میڈیا سائٹ پر اشتہارات دینا بند کردئیے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) نفرت انگیز مواد کی روک تھام کے لیے مناسب اقدامات نہ کرنا فیس بک کو مہنگا پڑ گیا۔ 100سے زائد کمپنیوں نے اس کا بائیکاٹ کر دیا۔ میل آن لائن کے مطابق گزشتہ دنوں پیپسی کولا اور سٹاربکس نے بھی فیس بک پرآئندہ تشہیر نہ کرنے کا اعلان کر دیا جس سے فیس بک کا بائیکاٹ کرنے والی کمپنیوں کی فہرست 100سے اوپر چلی گئی ہے۔ سٹاربکس کی طرف سے تو فیس بک سمیت تمام سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر تشہیر نہ کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ان کمپنیوں کا کہنا ہے کہ فیس بک کی طرف سے صارفین کو بے لگام چھوڑ دیا گیا ہے اور جس کا جو جی چاہتا ہے وہ پوسٹ کر دیتا ہے۔ فیس بک نفرت انگیز مواد کو روکنے کے لیے کچھ نہیں کر رہی۔ سی این بی سی کے مطابق فیس بک کے بائیکاٹ کی یہ مہم بین الاقوامی بائیکاٹ کا روپ دھار چکی ہے اور آئے روز نئی کمپنیاں فیس بک کے بائیکاٹ کا اعلان کر رہی ہیں۔ اب تک بائیکاٹ کرنے والی کمپنیوں میں ویریزون کمیونی کیشنز اور یونی لیور پی ایل سی بھی شامل ہیں۔ گزشتہ ہفتے سے شروع ہونے والی اس مہم کی وجہ سے سٹاک مارکیٹ میں فیس بک کے حصص میں نمایاں کمی آ چکی ہے جس سے فیس بک کو اب تک 56ارب ڈالر کا نقصان پہنچ چکا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -