ٹک ٹاک ویڈیوز نے مصری رقاصہ کو 5 سال کے لیے جیل پہنچا دیا

ٹک ٹاک ویڈیوز نے مصری رقاصہ کو 5 سال کے لیے جیل پہنچا دیا
ٹک ٹاک ویڈیوز نے مصری رقاصہ کو 5 سال کے لیے جیل پہنچا دیا

  

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) مصر میں ایک بیلی ڈانسر کو ٹک ٹاک پر غیراخلاقی ویڈیوز پوسٹ کرنے کے جرم میں 5سال قید کی سزا سنا دی گئی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس رقاصہ کا نام سما المصری ہے جس کے خلاف خاندانی روایات و اقدار پامال کرنے کے الزام کے تحت مقدمہ درج کیا گیا۔ عدالت میں42سالہ سما المصری نے موقف اختیار کیا کہ اس کی ویڈیوز چوری ہو گئی تھیں اور کسی اور نے اس کے نام سے ٹک ٹاک اکاﺅنٹ بنا کر پوسٹ کیں۔

رپورٹ کے مطابق سما المصری کو رواں سال اپریل میں گرفتار کرکے اس کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا اور اب اس کا جرم ثابت ہونے پر اسے پانچ سال کے لیے جیل بھجوا دیا گیا ہے۔ ایم پی جان طلعت نے عالمی خبر رساں ایجنسی رائٹرز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”سما المصری جیسے انفلوئنسرز ملک کی فیملی روایات اور اقدار کو تباہ کر رہے ہیں جس کی ملک کے قانون میں قطعی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ ایسی اخلاق باختگی آزادی کے زمرے میں نہیں آتی۔ آزادی اور اخلاق باختگی میں زمین آسمان کا فرق ہے۔ میں مطالبہ کرتا ہوں کہ سما المصری جیسی دیگر خواتین سوشل میڈیا سٹارز کے خلاف بھی قانونی کارروائی کی جائے جو ملک میں بے حیائی اور جسم فروشی کو ہوا دے رہی ہیں۔“

مزید :

تفریح -