کراچی والوں نے لوڈ شیڈنگ سے تنگ آکر کراچی الیکٹرک کے ملازمین کو باندھ کر تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

کراچی والوں نے لوڈ شیڈنگ سے تنگ آکر کراچی الیکٹرک کے ملازمین کو باندھ کر تشدد ...
کراچی والوں نے لوڈ شیڈنگ سے تنگ آکر کراچی الیکٹرک کے ملازمین کو باندھ کر تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) گرمی بڑھتے ہی خلاف توقع لوڈ شیڈنگ میں ہوشربا اضافے نے شہریوں کا جینا محال کر دیا ہے۔ ایسے میں گرمی اور لوڈ شیڈنگ کے ستائے کراچی کے شہریوں نے کے الیکٹرک کے ملازمین کو باندھ کر تشدد کا نشانہ بناڈالا۔ پڑھ لو کے مطابق کراچی میں 8سے 12گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے جس پر شہری شدید اضطراب میں ہیں۔ گزشتہ دنوں گلشن اقبال کے علاقے میں کے الیکٹرک کے دو ملازم شہریوں کے ہتھے چڑھ گئے اور انہوں نے قانون کو ہاتھ میں لیتے ہوئے ملازمین کو بجلی کے کھمبے کے ساتھ باندھ کر تشدد کا نشانہ بنایا۔

رپورٹ کے مطابق ملازمین پر تشدد کے ایسے ہی واقعات ماضی میں بھی ہو چکے ہیں اور لوگ ان واقعات کی ویڈیوز بھی انٹرنیٹ پر پوسٹ کر رہے ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ کے الیکٹرک والوں کو راہ راست پر لانے کا یہی طریقہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق یہ دونوں ملازم نچلے درجے کے ملازم تھے جس پر کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ لوڈ شیڈنگ میں ان لوگوں کا کیا قصور ہے۔ اصل ذمہ دار تو کوئی اور ہیں۔ یہ بیچارے تو اپنے بچوں کی روزی کے لیے کام کر رہے ہیں لہٰذا ان پر ہاتھ اٹھانا درست نہیں ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -