" ڈیڈی میں سانس نہیں لے پا رہا ، آکسیجن نہیں مل رہی، بائے پاپا بائے" موت سے پہلے کورونا کے نوجوان مریض کا رلا دینے والا ویڈیو پیغام

" ڈیڈی میں سانس نہیں لے پا رہا ، آکسیجن نہیں مل رہی، بائے پاپا بائے" موت سے ...

  

حیدر آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاستوں آندھرا پردیش اور تلنگانہ کے مشترکہ دارالحکومت حیدر آباد میں کورونا کے ایک نوجوان مریض کا ہلاکت سے پہلے ریکارڈ کیا گیا ویڈیو پیغام منظر عام پر آگیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 34 سالہ روی کمار حیدر آباد کے چیسٹ ہسپتال میں داخل تھے، جہاں جمعہ کو ان کی موت واقع ہوگئی۔ روی کمار نے اپنی موت سے کچھ ہی دیرپہلے اپنے باپ کو ایک ویڈیو پیغام بھیجا تھا۔ روی کمار نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا " ڈیڈی میں سانس نہیں لے پا رہا ہوں، آکسیجن نہیں مل رہی، بائے پاپا بائے"

بیٹے کے ویڈیو پیغام اور ہلاکت کے بعد روی کمار کے والد نے ہسپتال پر لا پرواہی کا الزام لگایا ہے۔ روی کمار کے والد نے کہا ہے کہ اس کے بیٹے کو 102 بخار تھا ، اسے چیسٹ ہسپتال میں بھرتی کرایا گیا جہاں اسے آکسیجن لگائی گئی تھی جو بعد میں ہٹادی گئی جس کی وجہ سے اس کی موت واقع ہوئی۔

دوسری جانب چیسٹ ہسپتال کے سربراہ محبوب خان کے مطابق روی کمار کو 24 جون کو ہسپتال میں بھرتی کرایا گیا اور اس کی 26 جون کو موت واقع ہوگئی۔ جب اسے ہسپتال میں داخل کیا گیا تو اس وقت اس کی طبیعت خراب نہیں تھی، ہسپتال انتظامیہ نے نہ تو اس کی آکسیجن ہٹائی اور نہ ہی لاپرواہی کی۔ کورونا نے روی کمار کے پھیپھڑوں کے ساتھ دل پر بھی اثر کیا جس کی وجہ سے اس کی موت واقع ہوگئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -کورونا وائرس -