محکمہ انسانی حقو ق و اقلیتی امور کے زیراہتمام صوبائی ایڈووکیسی فورم

    محکمہ انسانی حقو ق و اقلیتی امور کے زیراہتمام صوبائی ایڈووکیسی فورم

  

لاہور (لیڈی رپورٹر)صوبائی محکمہ انسانی حقوق و اقلیتی امور اور ادارہ استحکام شرکتی ترقی کے باہمی اشتراک سے لاہور کے ایک مقامی ہوٹل میں صوبائی ایڈووکیسی فورم کا انعقاد کیا گیا، جس میں صوبائی وزیر انسانی حقوق اعجاز عالم آ گسٹین نے بطور مہمان خصوصی جبکہ ترجمان حکومت پنجاب مسرت جمشید چیمہ نے اعزازی مہمان خصوصی کے طور پر شرکت کی۔فورم میں ماہر قانون افتخار احمد،ڈی جی وومن اتھارٹی پنجاب ارشاد وحید، نمائندگان سول سوسائٹی، اکیڈمیہ،پولیس،وکلاء اور دیگر متعلقہ محکموں کے نمائندگان نے بھی شرکت کی۔ادارہ استحکام شرکتی ترقی کے ریجنل ہیڈ شاہ نواز خان نے تمام شرکا کو پروجیکٹ اے آر سی (بنیادی وجوہات تک رسائی) کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ادارہ استحکام شرکتی ترقی معاشرے میں بسنے والے کمزور طبقے کو انصاف کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر ایک ایسی پالیسی مرتب کرنا چاہتا ہے،جس سے معاشرے میں انصاف کی فراہمی یکساں طور پر مہیا کی جاسکے جبکہ اس طرح کے فورم میں تمام اہم محکموں کے نمائندگان کی شرکت حوصلہ افزاء اقدام ثابت ہوگا۔فورم میں معاشرے کے کمزور طبقات کے لئیے انصاف کی فراہمی یقینی بنانے پر مختلف تجاویز پیش کی گئیں۔

 جبکہ بچوں، خواتین، خواجہ سراء اور معاشرے کے دیگر کمزور طبقات کے حوالے سے موجودہ قوانین میں بہتری کے پر زور دیا گیا۔صوبائی وزیر اعجاز عالم آگسٹین نے اپنے خطاب میں کہا کہ تحریک انصاف کے دور حکومت میں انسانی حقوق کی پالیسی نافذ کی جا چکی ہے جبکہ پہلی مرتبہ پنجاب میں سنگل نیشنل نصاب یقینی بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ انسانی حقوق کے پلیٹ فارم سے جیل ریفارمز پر متعلقہ محکموں کو بہت سی تجاویز دے چکے ہیں جبکہ جیلوں کی حالت میں تبدیلی بارے ہر تین ماہ بعد سپریم کورٹ میں رپورٹ جمع کرا رہے ہیں۔ صوبائی وزیر نے مزید کہاکہ بچوں اور خواتین وغیرہ کے حوالے سے پولیس ٹریننگ کو یقینی بنا رہے ہیں جبکہ پنجاب میں انٹر فیتھ پالیسی پر کام کر رہے ہیں۔ اعجاز عالم نے ایس اوپی کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہاکہ اس طرح کے سیشن منعقد کرانے کے ثمرات یقینی طور پر بہت حوصلہ افزاء ہوں گے۔ترجمان حکومت پنجاب مسرت جمشید چیمہ نے کہاکہ ریاست مدینہ کی بنیاد انصاف کی یکساں فراہمی پر ہی ممکن ہے اور پہلے روز سے ہی انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنانے کے لئے کوشاں ہیں جبکہ انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے پبلک سروس پیغامات کو عام کرنا ہوگا تاکہ ایک عام آدمی کو بھی اس کے تمام بنیادی حقوق سے آگاہ کیا جا سکے۔ مسرت جمشید نے مزید کہاکہ ہم سب کو ملکر بالخصوص میڈیا کے توسط سے آگاہی مہم پر زور دینا ہوگاتاکہ ہر طرح کے امتیازی سلوک کے خاتمہ کو یقینی بنایا جا سکے۔فورم سے ماہر قانون افتخار احمد اور ڈی جی وومن اتھارٹی پنجاب ارشاد وحید کے علاوہ محکمہ انسانی حقوق سے اسسٹنٹ دائریکٹر عمر خان اور دیگر نے بھی مختصر خطابات کیئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -