بزرگوں نے پاکستان کیساتھ انصاف نہیں کیا، مہنگائی سب سے بڑا چیلنج، جلد قابو پالیں: عمران خان، بعض ارکان کی اعشایئے میں عدم شرکت پر اظہار ناراضگی

  بزرگوں نے پاکستان کیساتھ انصاف نہیں کیا، مہنگائی سب سے بڑا چیلنج، جلد قابو ...

  

 ناران(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے ہمارے بزرگوں نے پاکستان سے انصاف نہیں کیا،ہمارے درختوں اور جنگلات کو تباہ کیا، انہوں نے یہ نہیں سوچا کہ وہ بھی ایسا پاکستان چھوڑ کر جائیں جیسا انہیں ملا تھا،ہمیں اپنے سیاحتی مقامات کا خیال رکھنا ہے، سیاحت سے اتنا پیسہ ملے گا کہ لوگوں کو مالی فائدہ ہوگا، ہمارے سیاحتی علاقوں میں سیاحت سے نوکریاں ملیں گی، ہما ر ے دین میں پاکیزگی اور صفائی کی بہت اہمیت ہے، ہمیں اپنے ملک کو صاف کرنا ہے، کلین اینڈ گرین پاکستان کے وژن پرعمل پیرا ہیں۔  ٹورازم کا فروغ امن کے بغیر ممکن نہیں۔بیرون ممالک کے سیاح خود کو محفوظ سمجھیں تو پاکستان آئیں گے۔ پیر کوناران میں ٹائیگرز فورس سے وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ناران کا علاقہ دیکھ کر بہت خوشی ہوئی، پہلے آتے تھے تو یہاں کٹے ہوئے درخت نظر آتے تھے، اب یہاں بہت زیادہ درخت اگائے گئے ہیں۔ہم نے آنے والی نسلوں کیلئے وہ پاکستان چھوڑنا ہے کہ وہ مستقبل میں ہمارا شکریہ ادا کریں،بدقسمتی سے ہمارے بزرگوں نے پاکستان سے انصاف نہیں کیا،درختوں اور جنگلات کی تباہی کی، یہ نہیں سوچا کہ ایسا ہی پاکستان چھوڑ کر جائیں جیسا ہمیں ملا تھا۔انہوں نے کہا کہ کمشنر ریاض خان کو کہتا ہوں جنگلات کے گارڈز اور نگہبان مقامی لوگوں کو بنائیں، ان لوگوں کو پتہ ہے کہ یہاں سے کون لوگ ہیں جو درخت کاٹتے ہیں، ان سے بہتر کوئی جنگلات کی حفاظت نہیں کرسکتا۔ وزیراعظم نے کہا کہ دریائے کنہار میں گندگی پھینکی جاتی ہے، کاغان ڈویلپمنٹ اتھارٹی کیلئے چیلنج ہے کہ جو قانون بنائیں اس پر عملدرآمد بھی کرائیں، علاقے میں گندگی نہ پھیلائی جائے، ہمارا دین بھی صفائی کا حکم دیتا ہے، گندگی پھیلانے والوں کو سزائیں دی جائیں، نئے پاکستان میں نئی سوچ ہے، صفا ئی کی پہلے کوئی فکر ہی نہیں کرتا تھا، ہم نے اب اپنے ملک کو صاف کرنا ہے، ناران کی ٹراؤٹ مچھلی پورے پاکستان میں پسند کی جاتی ہے، یہاں غیر قانونی فشنگ کو روکا جائے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا سیا حت سے یہاں کے لوگوں کو نوکریاں ملیں گی، اس سے اتنا پیسہ آئے گا کہ ہم یہاں کے علاقوں کومزید بہتر بنا سکیں گیمقامی لوگوں کو سیاحت سے ہی اتنی نوکریاں مل جائیں گی کہ انہیں نوکریوں کیلئے کہیں جانا نہیں پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ اپنے علاقائی ایم این اے اور ایم پی ایز سے درخواست کرتا ہوں کہ اپنے علاقوں کو بچانا آپ کی ذمہ داری ہے، اس سے فائدہ آپ کا ہی ہو گا۔دریں اثناوزیراعظم عمران خان سے اتحادی جماعت مسلم لیگ(ق) اور قبائلی اضلاع سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی نے ملاقات جس میں بجٹ کی منظوری کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔(ق) لیگ کے ارکان میں وفاقی وزیر ہاؤسنگ چوہدری طارق بشیر چیمہ بھی شامل تھے۔مسلم لیگ(ق) کی جانب سے وزیراعظم کو اپنے تحفظات سے بھی آگاہ کیا گیا۔ قبائلی اضلاع کے ارکان میں گل داد خان، گل ظفر خان، ساجد خان، محمد اقبال خان، ملک فخر زمان خان اور جواد حسین شامل تھے،وزیراعظم نے کہاکہ سابقہ قبائلی اضلاع کی ترقی اولین ترجیح ہے،چاہتے ہیں کہ سابقہ قبائلی اضلاع کے شہری مکمل طور پر قومی دھارے میں شامل ہوں۔علاوہ ازیں وزیر اعظم عمران خان سے نیدرلینڈ کیلئے پاکستان کے نامزد سفیر سلجوق مستنصر تارڑ نے ملاقات کی جس میں وزیر اعظم نے بطورِ سفیر نیدرلینڈ نامزدگی پر ایمبیسڈر سلجوق تارڑ کو مبارکباد دی۔نیدرلینڈ کیلئے نامزد سفیر سلجوق مستنصر تارڑ نے اپنی حال ہی میں منظر عام پر آنے والی کتاب وزیر اعظم کو پیش کی۔

وزیراعظم ملاقاتیں 

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت نے 3سال میں مشکل حالات کا سامنا کیا، مہنگائی ہمارے لیے سب سے بڑا چیلنج ہے، تاہم اس پر بہت جلد قابو پا لیں گے، کمزور طبقے کو ٹارگٹڈ سبسڈی دینے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں،مشکل دور گزر گیا، آگے بہتری اور اصلاحات نظر آئیں گی، انہوں نے ان خیالات کا اظہار پیر کو  ارکان پارلیمنٹ کے اعزاز میں دئیے گئے  عشائیہ سے خطاب میں کیا، عشائیے میں ایم کیو ایم، مسلم لیگ (ق)، جی ڈی اے سمیت  دیگر اتحادی جماعتوں کے اراکین اسمبلی نے شرکت کی، اس موقع پر وزیر اعظم نے شرکاء سے مختصر خطاب میں کہا کہ مشکل حالات میں ملک چلا رہے ہیں، حکومت نے 3سال میں مشکل حالات کا سامنا کیا، پاکستان کھانے پینے کی اشیا بھی درآمد کر رہا ہے، گندم اور دالیں بھی امپورٹ کرنا پڑ رہی ہیں، ہم اب زرعی شعبے کی ترقی کیلئے پیکج لا رہے ہیں، کسانوں کو منڈیوں اور صارفین سے جوڑنے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں، امید ہے کہ ملکی معاشی حالات اتحادیوں کی سپورٹ سے بہتر بنا لیں گے، اتحادیوں نے ہر مشکل وقت میں حکومت کا بھرپور ساتھ دیا ہے اور آج بھی ان کی شرکت باعث تحسین ہے۔ وزیر اعظم نے عشائیے میں شرکت کرنے پر اراکین اسمبلی اور اتحادی جماعتوں کا شکریہ ادا کیا۔ وزیر اعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت نے کورونا وباء کے باوجود عوام دوست، غریب دوست اور زبردست بجٹ دیا ہے۔ اور امید ہے کہ وفاقی بجٹ بآسانی پاس ہو جائے گا۔عشائیے میں تحریک انصاف کے غیر حاضر ارکان اسمبلی پر وزیر اعظم نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا اور قومی اسمبلی میں چیف وہیپ عامر ڈوگر کو منگل کو ایوان میں تمام اراکین کی حاضری یقینی بنانے کا ٹاسک سونپ دیا۔ذرائع کے مطابق ارکان پارلیمنٹ کی مزیدار پکوان سے تواضع کی گئی۔ارکان پارلیمنٹ کو مٹن،مٹن کورما، کباب، بریانی، پالک پیش کی گئی۔ میٹھے میں دو ڈشز پیش کی گئیں۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر دفاع پرویز خٹک کا کہناتھا اتحادی ساتھ تھے، ساتھ رہیں گے۔بجٹ سے ایک روز پہلے وزیراعظم عشائیہ دیتے ہیں۔ وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا   عمران خان کہتے ہیں پاکستان مسائل سے نکل رہا ہے۔مسائل حل کریں گے اور پاکستان کو آگے لے کر جائیں گے۔

وزیر اعظم کاعشائیہ

مزید :

صفحہ اول -