تعلیم کا فروغ حکومت کی اولین ترجیحا ت میں شامل: شہرام  خان ترکئی 

      تعلیم کا فروغ حکومت کی اولین ترجیحا ت میں شامل: شہرام  خان ترکئی 

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیربرائے ابتدائی و ثانوی تعلیم شہرام خان ترکئی نے کہا ہے کہ تعلیم موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے جس کا اندازہ امسال تعلیم کے لئے مختص کردہ 206 ارب روپے کے بجٹ سے لگایا جاسکتا ہے۔ طلباء و طالبات کو بہترین تعلیمی سہولیات کی فراہمی کے لیے بہترین معیار کے نئے اسکول بھی تعمیر کیے جائیں گے جبکہ موجودہ سکولوں کو بھی اپ گریڈ کر رہے ہیں۔ اس کے علاوہ ڈراپ آؤٹ ریشو میں کمی لانے اور طالبات کی تعلیم شرح میں اضافے کیلئے سیکنڈ شفٹ سکولز پروگرام بھی اگست کے مہینے سے شروع کر رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوابی میں تعمیر ہونے والے اسکولوں کے دورہ کے موقع پر کیا محکمہ تعلیم کے حکام اور انجینئر بھی صوبائی وزیر تعلیم کے ہمراہ تھے۔ شہرام خان ترکئی نے منصبدار بوائز سکول، یعقوبی گرلز ہائی سکول اور سوڈھیر گرلز ہائی سکول کے تعمیراتی کام کا کا جائزہ لیا اور اسکولوں میں تعلیمی سرگرمیوں کے حوالے سے اساتذہ اور طلبہ و طالبات سے بات چیت کی۔ شہرام خان ترکئی کا کہنا تھا کہ تعلیم عام کرنا اور پورے صوبے کے ہر طالب علم تک بہترین تعلیمی سہولیات فراہم کرنا ہمارا مشن ہے۔ انہوں نے کہا کہ دور جدید کے تقاضوں کے مطابق ہم سمارٹ سکول پروگرام شروع کر رہے ہیں کورس کو ڈیجیٹلائزڈ کرنے کے ساتھ ساتھ میرٹ پر اساتذہ کی بھرتی کا عمل بھی جاری ہے۔ جبکہ اس بجٹ میں بھی 27 ہزار سے زیادہ اساتذہ بھرتی کرنے کا پروگرام ہے۔ اسی طرح کچی کلاس کے چھوٹے بچوں کے لئے بہترین سٹینڈرڈ کے دو ہزار نئے ای سی ای رومز بھی تعمیر کر رہے ہیں۔ میرٹ پرسات ہزار سے زیادہ سکالرشپس ذہین طلباء اور طالبات کو دی جا رہی ہیں ہیں۔ شہرام خان ترکئی نے مزیدکہا کہ کہ میرا مشن ہے کہ اگلے سال سے سے کوئی بھی بچہ ٹاٹ پر بیٹھ کر نہیں پڑے گا سب بچوں کو فرنیچر ملے گا تقریبا بارہ لاکھ بچوں کو تین ارب روپے کی لاگت سے صوبے کے 28 اضلاع میں چار مہینوں کے اندر فرنیچر فراہم کیا جائیگا۔ اور اس سال مزید 3 ارب روپے بھی منظور ہو چکے ہیں جس سے باقی رہ جانے والے بچوں کو بھی اسی سال فر نیچر کی فراہمی کے لیے اقدامات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج کے بعد ہر سکول میں ٹیبلٹ ہوگا جو کہ روزانہ کی بنیاد پر سکول،اساتذہ، طلباء و طالبات اور دوسری تمام ہر قسم کی معلومات فراہم کرے گا جس پر فوری ایکشن لیا جائے گا۔ شہرام خان ترکئی نے کہا کہ سرکاری سکولوں میں اب ہر قسم کی سہولیات اور میرٹ پر بھرتی شدہ ذہین اساتذہ موجود ہیں جبکہ جاری ریفارمز اور بہترین پالیسی کی بدولت نتائج میں بھی بہت بہتری آئی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -