کورونا وبا ء کے دوران طبی عملے کا کردار ناقابل فراموش: تیمور جھگڑا

کورونا وبا ء کے دوران طبی عملے کا کردار ناقابل فراموش: تیمور جھگڑا

  

 پشاور(سٹا ف رپورٹر)کورونا وباء کے دوران طبی عملے نے اپنی جانوں کو خطرے میں ڈال کر عوام کی زندگیاں بچائیں۔ ڈاکٹرز، نرسز، پیرامیڈیکس سمیت دیگر معاون عملے کی خدمات مثالی ہیں۔ وباء کے دوران کئی مسیحا اس وائرس کا شکار ہو کر شہید ہوئے۔ حکومت شہید طبی عملے کے اہلخانہ کو تنہا نہیں چھوڑے گی۔ ان خیالات کا اظہار خیبرپختونخوا کے وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم خان جھگڑا نے کرک شہر کی کیٹیگری سی ہسپتال کے کورونا وائرس سے شہید ہونے والے کلینیکل ٹیکنیشن (سرجیکل) انعام اللہ کی بیوہ اور بیٹی کو صوبائی حکومت کی جانب سے امدادی چیک دینے کے موقع پر کیا۔ انعام اللہ گزشتہ 20 سال سے محکمہ صحت سے منسلک تھے اور کیٹیگری سی ہسپتال کرک میں خدمات سر انجام دے رہے تھے۔ وہ گزشتہ سال جون میں کورونا وائرس کا شکار ہو کر شہید ہو گئے تھے۔ شہید انعام اللہ کے اہلخانہ کو صوبائی حکومت کی جانب سے امدادی چیک دینے کے موقع پر صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ کورونا وباء کے دوران طبی عملے کا کردار ناقابل فراموش ہے۔ ڈاکٹرز، نرسز، پیرا میڈیکس، لیڈی ہیلتھ ورکرز اور وزیٹرز سمیت تمام معاون عملے کی زندگیاں سب سے زیادہ خطرے میں گھری رہیں۔ طبی عملے نے اپنی جانیں خطرے میں ڈال کر عوام کی زندگیاں بچائیں۔ حکومت طبی عملے کی قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور شہید عملے کے اہلخانہ کو تنہا نہیں چھوڑے گی۔ 

مزید :

صفحہ اول -