سندھ میں مزارات، انڈور جمز، سوئمنگ پول کھولنے کا فیصلہ

  سندھ میں مزارات، انڈور جمز، سوئمنگ پول کھولنے کا فیصلہ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی صدارت میں کورونا ٹاسک فورس کے اجلاس میں صوبے بھر میں مزارات، انڈور جمز، سوئمنگ پول کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ منگل کو این سی او سی جو فیصلہ کریگی وہ سندھ حکومت بھی کھول دے گی لیکن صوبے میں کورونا سے اموات کی شرح ابھی بھی کم نہیں ہو رہیں۔اجلاس میں صوبائی وزرا ڈاکٹر عذرا پیچوہو، سید ناصر شاہ، سعید غنی، مشیر قانون مرتضی وہاب، قاسم سومرو، آئی جی پولیس، ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ۔ پرنسپل سیکریٹری، کمشنر کراچی سیکریٹری اسکول ایجوکیشن احمد بخش ناریجو، اسپیشل سیکریٹری ریاض الدین شیخ، سیکریٹری فنانس آصف جہانگیر، ڈبلیو ایچ او کی ڈاکٹر سارہ، ڈاکٹر قیصر، کور فائیو، رینجرز اور دیگر اداروں کے نمائندہ شریک ہوئے۔اجلاس میں بریفنگ دی گئی کہ صوبے میں کورونا کی شرح 3.7 فیصد ہے، کل شام تک 14 ہزار 52 ٹیسٹ کیے گئے جس میں 521 نئے کیسز سامنے آئے۔وزیراعلی سندھ نے کہا کہ آئندہ روز این سی او سی میں ہونے والے فیصلوں پر عمل کریں گے۔کراچی میں کیسز کی شرح 7.54 ہے جو 25 جون کو 10.47 فیصد تھی، کراچی میں گزشتہ 7 دن میں شرقی میں 15 فیصد کیسز سامنے آئے، نئے کیسز کی شرح جنوبی اور غربی میں 9، ملیر میں 8، سینٹرل میں 7 فیصد ہے۔گزشتہ 30 دن میں 368 اموات ہوئیں جن میں 208 یعنی 56 فیصد اسپتالوں میں ہوئیں، کوروناسے انتقال کرنے والوں میں 83 مریض یعنی 23 فیصد وینٹی لیٹرز پر تھے، کورونا کے 77 یعنی 21 فیصد مریض گھروں میں انتقال کرگئے۔وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ  اموات کی شرح ابھی بھی کم نہیں ہو رہیں۔سندھ کو ابتک 41لاکھ 75 ہزار 997 ویکسین کی خوراکیں موصول ہوئی ہیں، ابتک 33لاکھ 20ہزار 251 ویکسین لگ چکی ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -