وی سی اسلامیہ یونیورسٹی کا آئل سیڈ ڈویلپمنٹ بورڈ کے مرکزی دفتر کا دورہ، منیجنگ ڈائریکٹر سے ملاقات، مشترکہ منصوبوں پر تبادلہ خیال

وی سی اسلامیہ یونیورسٹی کا آئل سیڈ ڈویلپمنٹ بورڈ کے مرکزی دفتر کا دورہ، ...

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور نے گزشتہ دنوں پاکستان(بقیہ نمبر44صفحہ7پر)

 آئل سیڈڈویلپمنٹ بورڈ کے مرکزی دفتر کا دورہ کیا اور مینیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر خیر محمد کاکٹر سے ملاقات کی۔اس موقع پر سیچوان ایگریکلچر یونیورسٹی چین  کے پوسٹ ڈاکٹر، ڈاکٹر محمد علی رضا بھی موجود تھے۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں جاری زرعی منصوبوں کے لیے معاونت اور مشترکہ منصوبوں سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں جانب اتفاق رائے پایا گیا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے مکئی اور سویابین کے میگا پروجیکٹ کے لیے پاکستان آئل سیڈ ڈویلپمنٹ بورڈ بھرپور مدد فراہم کرے گا۔ مینیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر خیر محمد کاکٹر نے کہا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پورزرعی ترقی میں نہ صرف جنوبی پنجاب بلکہ ملک بھر میں نمایاں کردار ادا کر رہی ہے جس کی بھر پورحوصلہ افزائی کی جائے گی۔ اس موقع پر تین بڑے منصوبوں کے لیے باہمی تعاون کی پیش رفت بھی سامنے آئی۔جبکہ وائس چانسلر انجینئر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کی ہدایت پر ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام (ADP)کے حوالے سے تما م ملحقہ کالجز کے اساتذہ اور سربراہان کے لیے ایک روزہ ٹریننگ ورکشاپ کا اہتمام کیاگیا۔ ڈیپارٹمنٹ آف ایجوکیشن سے پروفیسر ڈاکٹر طاہر ندیم اور نوشین ملک نے تعلیم و تعلم کے حوالے سے گفتگو کی۔ڈیپارٹمنٹ آف انگلش سے پروفیسر ڈاکٹر بشریٰ ناز نے انگریزی زبان کی تدریس سے متعلق آگاہی فراہم کی۔ ایسوسی ایٹ کالجز سے آئے ہوئے اساتذہ کو اندرونی امتحانات، مواد، تعلیم و تدریس کے مسائل اور دیگر جدید طریقوں سے آگاہی فراہم کی گئی۔ اس تربیتی ورکشاپ کی صدارت پروفیسر ڈاکٹر معظم جمیل، رجسٹرار، اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور نے کی۔ انہوں نے پروفیسر ڈاکٹر ارشاد حسین ڈائریکٹر انڈر گریجویٹ سٹڈیز سینٹرکی جانب سے ورکشاپ کے انعقاد پر خصوصی تعاون کو سراہا۔ ایکسپرٹ پینل میں طالب حسین ایڈیشنل کنٹرولر امتحانات نے تنظیمی اعتبار سے متعلق مسائل سے متعلق آگاہ کیا۔ تربیتی ورکشاپ کے اختتام پر اس بات کا اعادہ کیا گیا کہ اس ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام سے طلباء و طالبات جدید تعلیمی نظام سے متعارف ہونگے اور ایک بین الاقوامی سطح کا نظام متعارف ہوگا جس سے ڈگری یافتہ طلباء وطالبات بین الاقوامی اور گلوبل تعلیمی نیٹ ورک سے جڑ جائیں گے۔ 

تبادلہ خیال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -