شجاع آباد کینال: مین برانچ کو پختہ کرنیکا منصوبہ فائلوں میں دفن 

  شجاع آباد کینال: مین برانچ کو پختہ کرنیکا منصوبہ فائلوں میں دفن 

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر) ملتان شہر کے حساس اور گنجان آباد علاقے سے گزرنے والی شجاعبادکینال کی مین برانچ کو سورج میانی ہیڈورکس سے مظفرآباد تک پختہ کرنے کا منصوبہ سرد خانے کی نذر ہوکر رہ گیا،سال 2016ء میں ملتان انٹرنیشنل ائرپورٹ کی حساسیت کے پیش نظر 19کیوسک کی مین برانچ کو پختہ کرنے کیلئے 32کروڑ مالیتی منصوبے کا پی سی ون پنجاب حکومت کو بھجوایا گیا مگر تاحال نہ منظوری ہوئی نہ فنڈز فراہم کئے گئے(بقیہ نمبر55صفحہ7پر)

،مذکورہ علاقے میں شجاعباد کینال کا مشرقی پشتہ کمزو ر ہوگیا،شگاف پڑنے گنجان آباد شہری آبادیاں اور ملتان ائیر پورٹ زیرا ٓب آسکتے ہیں۔تفصیل کے مطابق ملتان شہر کے شہری گنجان آباد شہری علاقے سے گزرنے والی 19کیوسک گنجائش کی مین شجاعباد کینال (سکندری نالہ) کی مناسب بھل صفائی نہ ہونے اور بندی سیزن کے دوران مٹی چوری کے باعث مشرقی پشتہ کمزور ہوچکا ہے جس کے باعث مذکورہ کینال میں خدانخواستہ شگاف پڑنے کی صورت میں شہری آبادی اور ملتان ایئر پورٹ بڑی تباہی سے دوچار ہوسکتا ہے۔اس ضمن میں مذکورہ حساسیت کے پیش نظر شجاعباد کینال ڈویثرن کی جانب سے سال 2016ء میں مذکورہ کینال کو ہیڈ سورج میانی سے مظفر آباد تک پختہ کرنے کا پی سی ون جس کی مالیت کا تخمینہ اس وقت تقریباً32کروڑ روپے لگایا گیا تھا پنجاب حکومت کو بھجوایا گیا تھا مگر مذکورہ منصوبہ سرد خانے کی نذر ہوکررہ گیا ہے۔اس ضمن میں پریشان کن امر یہ ہے کہ مذکورہ کینال کے پشتے کمزور ہونے کے اس میں آئے روزشگاف پڑنے کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے چندروز قبل موضع لنگڑیال کے علاقے میں بھی شگاف پڑ گیا تھا جسے بروقت مرمت کرکے شہر ی آبادی اور ملتان انٹرنیشنل ائیر پورٹ کو بڑی تباہی سے بچا لیا گیا اس ضمن میں عوامی وسماجی حلقوں نے حکومتی ارباب اخیتارسے مذکورہ کینال کو شہری حدود میں فوری طور پر پختہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ایکشن کا مطالبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -