چکن سوپ کے برتن میں گر کر شیف مارا گیا

چکن سوپ کے برتن میں گر کر شیف مارا گیا
چکن سوپ کے برتن میں گر کر شیف مارا گیا

  

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک) عراق میں ایک شیف گرم چکن سوپ کے برتن میں گر کر موت کے منہ میں چلا گیا۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق اس 25سالہ شیف کا نام عیسیٰ اسماعیل بتایا گیا ہے جو ظہوک گورنریٹ کے ضلع زاخو میں ایک شادی ہال کے کچن میں کام کر رہا تھا جب یہ المناک واقعہ پیش آیا۔ 

عیسیٰ تین بچوں کا باپ تھا۔ کچن میں وہ ایک بڑے برتن میں بارات کے لیے چکن سوپ تیار کر رہا تھا کہ پاﺅں پھسلنے سے وہ پتیلے میں جا گرا اور بری طرح جھلس گیا۔ اسے انتہائی تشویشناک حالت میں ظہوک کے ایک ہسپتال لیجایا گیا تاہم 5دن تک زندگی و موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد گزشتہ روز بالآخر وہ دنیا سے رخصت ہو گیا۔ عیسیٰ کے رشتہ داروں کا کہنا تھا کہ وہ گزشتہ 8سال سے پروفیشنل باورچی کے طور پر کام کر رہا تھا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -