فناس بل کی منظوری ، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے حکومتی معاشی ٹیم کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے پریشان کن بات کہہ دی 

فناس بل کی منظوری ، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے حکومتی معاشی ٹیم کو کڑی تنقید کا ...
فناس بل کی منظوری ، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے حکومتی معاشی ٹیم کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے پریشان کن بات کہہ دی 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ (ن) کی رہنما ڈاکٹر عائشہ غوث پاشانےکہاہے کہ وزیر خزانہ شوکت ترین کی باتوں، دعوؤں اور فنانس بل میں تضاد ہے، آئل ریفائنریوں کو جو مراعات دی گئی تھی وہ واپس لے لی گئی ہیں جبکہ ٹیکسیشن کے نظام کو سہل بنانا پڑے گا کیونکہ ملک میں کاروبار کرنا مشکل بنا دیا گیا ہے۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں فنانس بل کی منظوری کے موقع پر خطاب کرتے ہوئےسابق وزیر خزانہ پنجاب ڈاکٹر عائشہ غوث پاشانےکہاکہ معیشت بحالی کےمرحلہ میں ہے،ٹیکس گزار پریشان ہے،اس لئےضروری تھاکہ ٹیکس میں اضافہ نہ ہوتامگراسکےبرعکس تنخواہ دارطبقہ کےلئےمیڈیکل اوردیگرسہولیات پرٹیکس کی تجویز دی گئی ہے،ایس آر اوز سے پارلیمان کی بالادستی کو نقصان پہنچ رہا ہے، وزیر خزانہ اس ایشو پر توجہ دیں۔

انہوں نے کہاکہ فنانس بل میں ٹیکس دائرہ کا تین شعبوں میں صوبائی ٹیکسیشن کے اختیار میں مداخلت ہے،غیر منقولہ پراپرٹی پر نیشنل گین ٹیکس اور ورکرز ویلفیئر فنڈ صوبائی سبجکیٹ ہیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -