حکومت نے عوام پر ایک اور مصیبتوں کا پہاڑ توڑ ڈالا ، پٹرولیم مصنوعات پر کتنی لیوی عائد کی جائے گی ؟ قومی اسمبلی میں ترمیم منظور 

حکومت نے عوام پر ایک اور مصیبتوں کا پہاڑ توڑ ڈالا ، پٹرولیم مصنوعات پر کتنی ...
حکومت نے عوام پر ایک اور مصیبتوں کا پہاڑ توڑ ڈالا ، پٹرولیم مصنوعات پر کتنی لیوی عائد کی جائے گی ؟ قومی اسمبلی میں ترمیم منظور 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) قومی اسمبلی کے اجلاس میں فنانس بل 2022-23کی منظوری کے دوران پٹرولیم مصنوعات پر پچاس روپے تک فی لیٹر پٹرولیم لیوی عائد کرنے کی ترمیم منظور کر لی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر راجہ پرویز اشرف کی زیر صدارت جاری ہے جس میں فنانس بل 2022-23 کی شق وار منظوری جاری ہے ۔ وزیر مملکت برائے خزانہ عائشہ غوث نے تجاویز اسمبلی فلور پر پیش کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کے کہنے پرفنانس بل میں تبدیلی نہیں کی گئی، 80 فیصدترامیم براہ راست ٹیکسوں سے متعلق کی گئیں، ہمارامقصد امیرپرٹیکس لگانااورغریب کوریلیف دیناہے، سابق حکومت آئی ایم ایف سے جومعاہدہ کرکے گئی اس پرعملدرآمدکیاجارہاہے، پٹرولیم مصنوعات پرلیوی عائدکرنے کی تجویز ہے ، پٹرول اورڈیزل پرلیوی 50،50 روپے کرناچاہتے ہیں، ہائی آکٹین پرلیوی 50 روپے کرنے جارہے ہیں۔

ترمیم کی منظوری کے بعد مفتاح اسماعیل کا کہناتھا کہ ابھی 50 روپے لیوی لگانے کا ارادہ نہیں ہے ، یہ لیوی محض اجازت ہے ، ابھی پٹرولیم مصنوعات پر لیوی صفر ہے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -