لوڈشیڈنگ بڑھ گئی

لوڈشیڈنگ بڑھ گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ہمارے سٹاف رپورٹر کی اطلاع کے مطابق ملک میں بجلی کی پیداوار اور استعمال میں فرق چھ ہزار میگاواٹ تک پہنچ گیا ہے، جس کی وجہ سے لوڈشیڈنگ کا دورانیہ زیادہ بڑھ گیا، شہروں میں 10سے 12 اور دیہات میں12سے 16گھنٹے کی لوڈشیڈنگ ہو رہی ہے، جبکہ صنعتوں کے لئے بھی بجلی کی فراہمی کے دورانئے میں چار گھنٹے کی کمی کر دی گئی ہے۔ لوڈشیڈنگ کے بڑھ جانے سے پاکستان کے عوام مشکلات کا شکار ہو رہے ہیں، موسم میں تھوڑی سی تبدیلی سے یہ حال ہے تو درجہ حرارت مزید بڑھ جانے سے کیا ہو گا، فی الحال تو موسم اتنا سخت نہیں ہوا کہ اے سی چلنا شروع ہوں تاہم دوپہر میں پنکھے کی ضرورت پیدا ہو گئی ہے۔اس وقت لاہور جیسے شہر میں صورت حال یہ ہے کہ کسی شیڈول کے بغیر لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے اور ڈیڑھ گھنٹے تک برقی رو منقطع رکھی جاتی ہے اور پھر صارفین کو یہ بھی علم نہیں ہوتا کہ کب بند اور کب بحال ہو گی ، بجلی تقسیم کرنے والے اداروں کا موقف تو یہ ہے کہ ڈیموں میں پانی کم ہونے اور کم مقدار میں اخراج کی وجہ سے پن بجلی کی پیداوار زیادہ کم ہو گئی، مجبوراً لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بڑھانا پڑا ہے، ایسی حکومت جو2017ء تک لوڈشیڈنگ ختم کرنے کی دعویدار ہے اس کے دور میں تو یہ نہیں ہونا چاہئے۔ بجلی پیدا کرنے اور تقسیم کرنے والے اداروں کو مکمل طور پر علم ہے کہ کس موسم میں کس وقت بجلی کی کھپت بڑھے گی اور پیداوار اور استعمال کا فرق کتنا متاثر ہو گا اس کے باوجود پہلے سے یہ اہتمام نہیں کیا جاتا کہ فرنس آئل سے پیداوار حاصل کی جائے اور ایسا بروقت کیا جائے۔ یہ نہیں کہ جب پریشانی بڑھ جائے اور احتجاج میں شدت آئے تو آئی پی پیز سے مدد لی جائے۔

مزید :

اداریہ -