کراچی آپریشن کومنطقی انجام تک پہنچایا جانا چاہیے ‘ڈاکٹر وسیم اختر

کراچی آپریشن کومنطقی انجام تک پہنچایا جانا چاہیے ‘ڈاکٹر وسیم اختر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

فیصل آباد(بیورورپورٹ) جماعت اسلامی کے صوبائی امیر اور پنجاب اسمبلی میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہا ہے کہ حکمرانوں نے کسی سیاسی مفادات کی خاطر کراچی آپریشن کو منطقی انجام تک نہ پہنچایا تو قوم انہیں کبھی معاف نہیں کرے گی۔ محراب و منبر کو دہشت گردی سے منسلک کرنا پاکستان اور اسلامی کے خلاف عالمی سازش کا حصہ ہے،ملک کو اس وقت دیانت دار قیادت کی ضرورت ہے ،جماعت اسلامی کا دامن کرپشن سے پاک ہے ،عوامی توقعات پر پورا اتریں گے،3اپریل سے 12اپریل تک عشرہ دعوت منایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ شب چنیوٹ بازار میں ورکرز تربیتی کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری محبوب الزماں بٹ،ضلعی امیر سردار ظفر حسین خان، غلام عباس خان ،شیخ محمد مشتاق،انجینئر عظیم رندھاوا،اکرم کھرل،زمان خان نیازی،خادم حسین فاروقی،میاں حفیظ الرحمان اور میاں عبدالکریم بھی موجود تھے۔ڈاکٹر سید وسیم اخترنے کہا کہ لندن کی آل پارٹیز کانفرنس میں سب جماعتوں نے اتفاق رائے سے ایم کیو ایم کو فاشٹ تنظیم قرار دیتے ہوئے مستقبل میں اس کے ساتھ کسی قسم کے سمجھوتے نہ کرنے کا اعلان کیا تھا مگر پہلے پیپلز پارٹی اور اب ن لیگ اپنے مفادات کی خاطر اپنے ہی کئے ہوئے معاہدوں سے انحراف کر رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ دنیاکے چالیس سے زائدممالک کی فوج نے افغانستان پرچڑھائی کررکھی ہے جبکہ باون سے زائدمسلم ممالک کے حکمران خاموش تماشائی کاکردارادا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپنے اقتدار کو قائم رکھنے کے لئے آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کی ڈکٹیشن پر چلنے والے حکمران پاکستان کے عوام کے خیر خواہ نہیں ہو سکتے۔ حکمران اپنے غیر ملکی آقاؤں کی خوشنودی کے لئے19 کروڑ عوام کو قربانی کا بکرا بنانا چاہتے ہیں اور خود قربانی دینے کی بجائے عوام کی رگوں سے خون کا آخری قطرہ نچوڑنا چاہتے ہیں ۔ وسیم اختر

مزید :

صفحہ آخر -