کھلاڑیوں کے غیرملکی صحافیوں کوانٹرویو،کمیٹی کاجائزہ لینے کافیصلہ

کھلاڑیوں کے غیرملکی صحافیوں کوانٹرویو،کمیٹی کاجائزہ لینے کافیصلہ

  

لاہور (آئی این پی) ایشیا کپ اور ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں قومی کرکٹ ٹیم کی شکست ،کوچنگ اور سلیکشن کے معاملات کی تحقیقات کے لئے بنائی گئی پی سی بی کمیٹی کے سربراہ شکیل شیخ نے کہا ہے کہ کمیٹی قذافی سٹیڈیم لاہور میں مسلسل3روز تک اجلاس منعقد کرے گی اورآئندہ پیر تک اپنی رپورٹ کو حتمی شکل دے کر چیئرمین پی سی بی شہر یار خان کے حوالے کر دے گی۔ شکیل شیخ نے بتایاکہ قذافی سٹیڈیم لاہور میں کمیٹی کا اجلاس طلب کیا گیا ہے جو کہ بدھ اور جمعرات کو بھی جاری رہے گا۔ اجلاس کے پہلے روز ٹیم مینجمنٹ کے اراکین ہیڈ کوچ وقار یونس، مینجر انتخاب عالم، میڈیا مینجر آغا اکبر اور کپتان شاہد آفریدی کوکمیٹی کے روبرو بلایا گیا ہے اور کپتان شاہد آفریدی اگر دبئی میں ہونے کی وجہ سے (آج) نہ آسکے تو پھر وہ (کل) بدھ کے روز کمیٹی کے روبرو پیش ہوکر ایشیا کپ اور ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں شکست کی وجوہات سے کمیٹی کوآگاہ کریں گے۔کمیٹی کے اجلاس میں سابق کرکٹرز کو بھی بلایا گیا ہے جو کہ کمیٹی کو شکست کی وجوہات کے متعلق اپنی ماہرانہ رائے سے آگاہ کریں گے۔ شکیل شیخ نے کہا کہ کمیٹی ایشیا کپ اور ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں پاکستانی صحافیوں کو نظر انداز کرکے بھارتی صحافیوں کو پاکستانی ٹی ٹونٹی کرکٹ ٹیم کے کپتان سمیت دیگر کھلاڑیوں اور عہدیداران کے متنازعہ انٹر ویو کروانے کی شکایات کا بھی جائزہ لے گی۔کمیٹی کو میڈیا کی رپورٹس سے پتہ چلا ہے کہ بھارت کے خلاف میچ والے دن محمد عامر اور محمد حفیظ کے انٹرویو بھارت کے بڑے اخبارات میں شائع کئے گئے جبکہ آسٹریلیا کے میچ سے قبل گرانٹ فلاور کا انٹرویو ایک غیر ملکی اخبار کو کو دلوایا گیا جس میں گرانٹ فلاور نے پاکستانی بلے بازوں کو آڑے ہاتھوں لیا اور عمر اکمل کی بیٹنگ پر شکوک ظاہر کئے۔ ڈھاکہ میں ایشیا کپ کے دوران درخواست کے باوجود پاکستانی سرکاری میڈیا کو نظر انداز کرکے بھارتی چینل کو شاہد آفریدی کا خصوصی انٹر ویو دلوایا گیا۔شکیل شیخ نے کہا کہ کمیٹی ایشیا کپ اور ورلڈ کپ کے دوران قومی ٹی ٹونٹی کرکٹ ٹیم اور مینجمنٹ کے بارے میں ملنے والی تمام شکایات کا شفاف انداز سے جائزہ لے گی اور اپنی رپورٹ آئندہ سوموار تک چیئرمین پی سی بی کو دے گی۔ انہوں نے کہا کہ تحقیقاتی کمیٹی پر کسی قسم کا دباؤ نہیں ہے اور تمام فیصلے صرف اور صرف میرٹ پر کئے جائیں گے۔ ہمارا مقصد ہے کہ ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ اور ایشیا کپ میں جو غلطیاں ہوئی ہیں ان کا جائزہ لے کر چیئرمین پی سی بی کو رپورٹ دی جائے تاکہ مستقبل میں ایسی غلطیاں نہ دہرائی جاسکیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -