بینظیر قتل کیس میں ایف آئی اے ڈائریکٹر کا بیان قلمبند

بینظیر قتل کیس میں ایف آئی اے ڈائریکٹر کا بیان قلمبند

راولپنڈی(نیوز رپورٹر)انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے بے نظیر قتل کیس میں ایف آئی اے کے ڈائریکٹر خالد رسول کے بیان قلمبند کرائے جرح کیلئے سماعت 30مارچ تک ملتوی کر دی،گزشتہ روز عدالت نے بے نظیر بھتو قتل کیس کی سماعت شروع کی تو گواہ ایف آئی اے کے ڈائریکٹر خالد رسول حاضر تھے جنہوں نے عدالت کے روبرو اپنا بیان قلمبند کرایا جس پر ملک رفیق ایڈووکیٹ نے جرح کرنا تھا لیکن انہوں نے عدالت کو بتایا کہ سانحہ لاہور کے باعث وکلاء کی ہڑتال ہے اس لئے آئندہ تاریخ پیشی پر گواہ پر جرح کی جائے گی عدالت نے سماعت مزید کارروائی کیلئے ملتوی کر دی، سماعت کے موقع پر ایف آئی اے کے پراسکیوٹر چوہدری اظہر، ملزمان کے وکلاء ، سابق سی پی او سعود عزیز ، سابق ایس پی خرم شہزادکے علاوہ ملزمان رفاقت وغیرہ حاضر تھے،واضع رہے کہ 27دسمبر 2007ء کو لیاقت باغ کے مقام پر سابق وزیر اعظم محترمہ بے نظیر بھٹو جلسہ عام سے خطاب کرکے واپس جارہی تھیں کہ لیاقت چوک میں خود کش حملہ ہو گیا جس محترمہ جاں بحق ہو گئیں اس سانحہ میں پیپلز پارٹی کے متعدد کارکن جاں بحق اور زخمی ہو گئے تھے جس کا مقدمہ تھانہ سٹی پولیس نے درج کرکے کارروائی شروع کی۔

مزید : کراچی صفحہ اول