نہم امتحان میں لیگی رکن اسمبلی کے بیٹے کی جعلسازی ‘کیس میں بھی ہیرا پھیری

نہم امتحان میں لیگی رکن اسمبلی کے بیٹے کی جعلسازی ‘کیس میں بھی ہیرا پھیری

ملتان( سٹاف رپورٹر)نہم بائیالوجی کے پیپر میں ایم پی اے رانا محمودالحسن کے بیٹے عبداللہ محمودکی طرف سے امتحان میں کسی اور کو بٹھانے کے کیس میں گڑبڑ کرنے کا انکشاف ہوا ہے ۔تفصیل کے مطابق نہم بائیالوجی کے پیپر میں ایم پی اے رانا محمود الحسن کے بیٹے عبداللہ محمود نے جعلسازی کرتے ہوئے اپنی (بقیہ نمبر46صفحہ12پر )

جگہ کسی اور کو امتحان میں بٹھا یا‘فارم میں تصویر مختلف ہونے پر وہ پکڑا گیاجسے پولیس کے حوالے کر دیا گیا‘پولیس نے ایف آئی آر درج کرلی ‘پولیس نے ملزم کو عدالت میں پیش کیا جس کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا گیا‘پولیس نے عبداللہ محمود کو گرفتارنہیں کیا اور موقف اختیار کیا کہ جو ملزم پکڑا گیا تھا اس کیخلاف کارروائی کی گئی ہے ۔تعلیمی بورڈ کے ایک اعلیٰ افسر نے یہ شبہ ظاہر کیا ہے کہ عبداللہ محمود کی جگہ جو جعلی امیدوار پکڑا گیا تھااس کی جگہ کسی اور کو پولیس نے جیل بھجوایا تھا‘موقع سے پکڑے گئے امیدوار کا نام رانا عرفان سامنے آیا تھا ‘اب پتہ چلا ہے کہ علی وارث کیخلاف کارروائی کی گئی ہے ‘ذرائع کے مطابق سیاسی دباؤ پر اس معاملے کو دبانے کی کوشش کی جارہی ہے‘ایم پی اے کے بیٹے کو فائدہ پہنچانے کے لئے کیس کو اس حد تک کمزور کر دیا جائے گا کہ اس میں کچھ نہیں رہے گا ۔اس بارے میں جب ایک اعلیٰ پولیس افسر سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ سپرنٹنڈنٹ امتحانی سنٹر نے جو امیدوار پکڑ کر دیا تھا‘اسی کیخلاف پرچہ دیا ہے تاہم گڑ بڑ کرکے ملز م کو تبدیل کرکے اس کی جگہ کسی اور کو جیل بھجوانے کے شبہ کا معاملہ بھی چیک کیا جائے گا ‘عبداللہ محمود مرکزی ملزم ہے جس نے عبوری ضمانت کرالی تھی‘ عبداللہ محمود کا چالان ضرور ہوگا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر