پی ٹی آئی کی چکوال میں رکنیت سازی فیصلہ کن مرحلہ میں داخل ہوگئی

پی ٹی آئی کی چکوال میں رکنیت سازی فیصلہ کن مرحلہ میں داخل ہوگئی

  

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کی ضلع چکوال میں رکنیت سازی مہم فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہوگئی ہے، تمام بڑے قائدین زیادہ سے زیادہ لوگوں کو رکنیت دلانے میں مصروف ہیں۔ انٹرا پارٹی الیکشن کے ذریعے اگر پی ٹی آئی ضلع چکوال میں مضبوط قسم کے لوگ عہدیداروں کی شکل میں سامنے لانے میں کامیاب ہوگئے تو پھر یقیناًآنے والے عام انتخابات میں مسلم لیگ ن کا مقابلہ پی ٹی آئی ہی کرے گی۔ پاکستان تحریک انصاف کے انٹرا پارٹی الیکشن ضلع چکوال میں فیصلہ کن پوزیشن کی طرف گامزن ہوگئے ہیں۔ ضلعی صدارت کیلئے تین سے زائد امیدوار سامنے آچکے ہیں۔ جن میں سید اسد شاہ ، چوہدری وحید ممتاز اور شیخ خرم شہزاد نمایاں ہیں۔ جبکہ کئی ڈارک ہارس بھی زیر زمین اپنی سرگرمیاں اور لابنگ تیز کر رہے ہیں۔ پی ٹی آئی کی زبردست رکنیت سازی مہم میں زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ممبران بنایا گیا ہے اور رکنیت سازی کی آخری تاریخ31مارچ ہے۔ بہرحال پی ٹی آئی جو پارٹی کے اندر الیکشن کروانے کا عمل شروع کیے ہوئے ہے وہ پاکستان کی کسی دوسری جماعت کو یہ اعزاز حاصل نہیں ۔پاکستان تحریک انصاف کے انٹرا پارٹی الیکشن میں ابھی تک پارٹی کے ضلعی سطح کے مقامی قائدین براہ راست شامل نہیں ہوئے ہیں۔ ان رہنماؤں میں راجہ یاسر سرفراز، ملک اختر شہباز، پیر شوکت حسین کرولی، علی ناصر بھٹی، شیخ وقار علی، پیر نثار قاسم، سردار منصور حیات ٹمن اور کرنل سلطان سرخرو کے علاوہ فوزیہ بہرام شامل ہیں۔ فوزیہ بہرام نے البتہ وحید ممتاز کے پارٹی کارکنوں کے اجلاس کی صدارت کی تھی جبکہ ابھی تک باقی مرکزی قائدین نے اپنے آپ کو پارٹی عہدیداروں کے الیکشن سے علیحدہ کیا ہوا ہے مگر وہ رکنیت سازی مہم میں بہرحال دلچسپی لے رہے ہیں اور جونہی ضلعی عہدیداروں کے الیکشن کا شیڈول آئے گا تو اس بات کا امکان ہے کہ یہ قائدین چھلانگ لگا کر اس وقت میدان میں اتریں گے اور پارٹی کے اندر زبردست ہلچل پیدا ہوگی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -