بٹ خیلہ کونسل کے فیصلوں اور قراردادوں پر عملدر آمد یقینی بنایا جائے

بٹ خیلہ کونسل کے فیصلوں اور قراردادوں پر عملدر آمد یقینی بنایا جائے

  

بٹ خیلہ (بیورو رپورٹ )تحصیل کونسل بٹ خیلہ کے اراکین نے خبردار کیا ہے کہ اگر کونسل کے فیصلوں اور قراردادوں سمیت تحصیل ناظم کے اختیارات پر عمل درآمد یقینی نہ بنایا گیا تواجتماعی استعفوں پر مجبور ہو جائیں گے منتخب نمائندہ کونسل کو مسلسل نظرانداز کرنا عوامی مینڈیٹ کی توہین ہے شہریوں کے مسائل حل نہیں کر سکتے تو اس سے بہتر ہے کہ گھر بیٹھ جائیں ان خیالات کا اظہار تحصیل کونسل بٹ خیلہ کے ماہانہ اجلاس میں اراکین نے خطاب کرتے ہو ئے کیا جو کہ کنونیئر پیر صفدر شاہ کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں تحصیل ناظم مولانا نعیم خان کے علاوہ مردو خواتین ممبران اور ٹی ایم اے کے افسران نے کثیر تعداد میں شر کت کی کنو نیئر نے اجلاس کو ٹی ایم اے کے اثا ثہ جات ان کی آمدن اور اس میں اضا فے کیلئے جاری اقدامات کی تفصیل سے آگاہ کیا جنرل بس سٹینڈپلئی اڈہ اور کونسل کے فیصلوں پر عمل درآمد وغیرہ کے بارے میں اراکین کے پوچھے گئے مختلف سوالوں کے جواب میں تحصیل ناظم نے کہا ہے کہ ٹی ایم اے اہلکار انھیں نہ صرف اہم امور میں نظرانداز بلکہ دھوکہ دے رہے ہیں محمد الیاس خان نے بس سٹینڈ کے مالک کو سہولتوں کی عدم فراہمی کے باوجود خلاف ضا بطہ15لاکھ روپے کی ادائیگی اور حنیف خان میموریل ہال کے جاری منصوبے میں انٹی کرپشن کی20لاکھ روپے کی ریکوری کی تحقیقات کا مطالبہ کیا جس سے پوری کونسل کی بدنامی ہو ئی ہے فضل واحد ضیاء الحق اور محمد زاہد نے سٹینڈنگ کمیٹیوں صفائی کے عملے کو فعال اور کونسل کے فیصلوں پر عمل درآمد کی ضرورت پر زور دیامو لانا تاج محمد نے پلئی اڈہ سنگین مسئلے کے حل کا مطالبہ کیاجبکہ عبدالکریم نے قلنگی ہائی سکول میں اسا تذہ کی کمی پوری کرنے کا مطالبہ کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -