مصر کا طیارہ مسافروں سمیت ہائی جیک کرکے قبرص میں اتار لیا گیا

مصر کا طیارہ مسافروں سمیت ہائی جیک کرکے قبرص میں اتار لیا گیا

  

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) ابراہیم سماہا نامی ہائی جیکرنے مصری ایئرلائن کا طیارہ ہائی جیک کرکے قبرص کے جنوبی ساحل کے قریب لارناکہ ایئرپورٹ پر اتارلیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ہائی جیکر نے غرناطہ کے کنٹرول ٹاور سے مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے 8 بجے رابطہ کیا اور 8 بج کر 50 منٹ پر جہاز کو ایئرپورٹ پر اترنے کی اجازت دے دی گئی ۔ ایئرپورٹ پر ایمرجنسی ٹیم تعینات کردی گئی ہے اور ایئرپورٹ کو ہر قسم کی پروازوں کیلئے بند کردیا گیا ہے جبکہ روٹین کی پروازوں کو دوسرے ایئرپورٹس کی جانب موڑدیا گیا ہے۔

ہائی جیکر کی طرف سے ایسا مطالبہ کہ دنیا حیرت میں ڈوب گئی، تفصیلات جاننے کیلئے یہاں کلک کریں

مصری ایئرلائن حکام کا کہنا ہے کہ اسکندریہ کے برج العرب ایئرپورٹ سے قاہرہ کے ایئرپورٹ کیلئے روانہ ہونے والی ایئربس ایم ایس 181 کے پائلٹ عمر الجمل کو ایک مسافر نے دھمکی دی کہ میرے پاس خود کش جیکٹ موجود ہے لہٰذا طیارے کو قبرص کے لارناکہ ایئرپورٹ پر اتار لو جس پر طیارے کو لینڈ کردیا گیا۔ ہائی جیکر نے طیارے میں موجود بچوں  ، خواتین اور مصری شہریوں سمیت تمام افراد  کو طیارے سے باہر نکال دیا  جبکہ دیگر 5 مسافروں اور عملے کے 8 افراد کو یرغمال بنایا ہوا ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز کا کہنا ہے کہ طیارے میں ایک مسلح شخص موجود ہے ۔مصری ایئرلائن کا طیارہ A320 اسکندریہ سے قاہرہ جارہا تھا اور اس نے صبح 8 بجے ٹیک آف کیا تھا اور اسے اڑان بھرے ہوئے ابھی صرف 30 منٹ ہوئے تھے کہ ہائی جیک ہوگیا۔ مصری ایئرلائن کی ایک خاتون اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ جہاز میں ایک بم کی موجودگی کی بھی اطلاعات ہیں ۔ قبرص کے سرکاری ریڈیو نے رپورٹ دی ہے کہ طیارے میں عملے کے ارکان سمیت 80 سے 81 افراد سوار ہیں جن میں  10 امریکی اور 8 برطانوی شہری بھی شامل ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -