پی آئی اے کو کارپوریٹ کرنا حکومتی اصلاحات کے ایجنڈے کا حصہ، ملازمین کو گھر بھیجنا پلان میں شامل نہیں: اسحاق ڈار

پی آئی اے کو کارپوریٹ کرنا حکومتی اصلاحات کے ایجنڈے کا حصہ، ملازمین کو گھر ...
پی آئی اے کو کارپوریٹ کرنا حکومتی اصلاحات کے ایجنڈے کا حصہ، ملازمین کو گھر بھیجنا پلان میں شامل نہیں: اسحاق ڈار

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ پی آئی اے کو کارپوریٹ کرنا حکومتی اصلاحات کے ایجنڈے کا حصہ ہے تاہم پی آئی اے ملازمین کو گھر بھیجنا حکومتی پلان کا حصہ نہیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

تفصیلات کے مطابق زاہد حامد کی زیر صدارت مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور چیئرمین نجکاری بورڈ محمد زبیر بھی شریک ہوئے۔ وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور حکومتی ٹیم نے پی آئی اے بل پر کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا کہ پی آئی اے کے اثاثوں کی مالیت 150 ارب روپے ہے جبکہ 30 جون تک پی آئی اے کو 22 ارب روپے درکار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پیٹرولیم قیمتوں میں کمی کے باوجود پی آئی اے کو 9 ماہ میں 7 ارب 75 کروڑ روپے کا نقصان پہنچا۔ اسحاق ڈار نے مزید بتایا کہ پی آئی اے کو کارپوریٹ کرنا حکومتی اصلاحات کے ایجنڈے کا حصہ ہے لیکن پی آئی اے ملازمین کو گھر بھیجنا حکومتی پلان میں شامل نہیں۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : لاہور /اہم خبریں