وقار یونس کی معافی بڑا پن، قومی ٹیم کی بدترین شکست کی وجوہات سامنے آنی چاہئیں: محمد یوسف

وقار یونس کی معافی بڑا پن، قومی ٹیم کی بدترین شکست کی وجوہات سامنے آنی ...
وقار یونس کی معافی بڑا پن، قومی ٹیم کی بدترین شکست کی وجوہات سامنے آنی چاہئیں: محمد یوسف

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد یوسف نے کہا ہے کہ ہیڈ کوچ وقار یونس کی جانب سے معافی مانگنا بڑا پن ہے لیکن ورلڈ ٹی 20 میں قومی ٹیم کی بدترین شکست کی جو بھی وجوہات ہیں وہ قوم کے سامنے آنی چاہئیں کیونکہ ہر دفعہ ہی ایسا ہوتا ہے کہ قوم کو کچھ پتہ ہی نہیں چلتا۔وقار یونس کو ملتان ریجن کی کرکٹ کا ہیڈ بنا دینا چاہئے تاکہ وہ اچھے کھلاڑی تیار کر سکیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

تفصیلات کے مطابق محمد یوسف کا کہنا تھا کہ ہیڈ کوچ ایک جانب کہہ رہے ہیں کہ سیاست نہیں دوسری طرف کہہ رہے ہیں کہ بہت ساری چیزیں ٹھیک کرنے والی ہیں تو سمجھ نہیں آئی کہ وہ درحقیقت بتانا کیا چاہتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان کے بہت بڑے کھلاڑی بھی ہیں اور ہیڈ کوچ بھی اور ٹیم کا ہیڈ کوچ کسی صورت بھی مجبور نہیں ہو سکتا ۔ اگر دو سال میں چیزیں غلط ہوئی ہیں تو کرکٹ بورڈ کو اور ذمہ داروں کو اس سے آگاہ کرنا چاہئے تھا لیکن وہ دو سال ایسے ہی چلتے رہے۔

انہوں نے کہا کہ اب یہ باتیں کرنا درست نہیں، اب اگر وہ جانا چاہتے ہیں تو انہیں جانا چاہئے اور اگر بورڈ نہیں رکھنا چاہتا تب بھی کوئی مسئلہ نہیں۔ ایک سوال کے جواب میں محمد یوسف نے تجویز دی کہ وقار یونس کو ملتان ریجن کی کرکٹ کا ہیڈ بنا دینا چاہئے اور وہاں کے تمام کوچز کو ان کے نیچے کام کرنے دیا جائے تاکہ وہ اس ریجن سے اچھے کھلاڑیوں کو تیار کر سکیں جبکہ ٹیم کے ساتھ باہر کے لوگوں کو لگا دیا جائے۔ فرسٹ کلاس کرکٹ ناکارہ ہونے کی وجہ سے ہی ہمیں پلیئرز نہیں مل رہے اور اگر وقار یونس کی طرح تمام بڑے کھلاڑیوں کو ریجن کرکٹ کا ہیڈ بنا دیا جائے تو بہتری آ سکتی ہے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

قومی ٹیم کے نئے ہیں کوچ اور کپتان سے متعلق سوال پر محمد یوسف نے کہا کہ کوچ غیر ملکی ہی ہونا چاہئے کہ کپتان سرفراز کو بنا دینا چاہئے کیونکہ وہ ایک بہادر اور اچھا کھلاڑی ہے۔

مزید :

کھیل -