وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس، ریڈ زون سے مظاہرین کو باہر نکالنے کیلئے آپریشن کا حتمی فیصلہ، پنجاب پولیس بھی مدد کیلئے طلب

وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس، ریڈ زون سے مظاہرین کو باہر نکالنے کیلئے آپریشن ...
وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس، ریڈ زون سے مظاہرین کو باہر نکالنے کیلئے آپریشن کا حتمی فیصلہ، پنجاب پولیس بھی مدد کیلئے طلب

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے اسلام آباد کے ریڈزون میں موجود مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے آپریشن کا فیصلہ کر لیا ہے اور آج رات اس فیصلے پر عملدرآمد کا امکان ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت مشاورتی اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید، وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، سینیٹر مشاہد اللہ، عبدالقادر بلوچ، ڈاکٹر آصف کرمانی اور عرفان صدیقی شریک ہوئے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

 ذرائع کے مطابق اجلاس میں اسلام آباد کے ریڈ زون کی صورتحال سے متعلق مشاورت کی گئی۔ وزیراعظم نواز شریف نے مظاہرین کے ریڈ زون میں داخل ہونے پر عدم اطمینان اور خفگی کا اظہار کیا جبکہ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ریڈ زون میں داخلے سے متعلق اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مظاہرین کے ریڈ زون میں داخلے کی وجوہات سے متعلق آگاہ کیا جبکہ مظاہرین کے ضلعی انتظامیہ کیساتھ ہونے والے معاہدے کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں متفقہ طور پر ریڈزو ن کو خالی کرانے کیلئے آج رات آپریشن کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور اس سلسلے وزارت داخلہ کو باقاعدہ طور پر آگاہ کرتے ہوئے متعلقہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایات بھی جاری کر دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق یہ آپریشن سول آرمڈ فورسز کریں گی اور پنجاب پولیس بھی مدد کیلئے طلب کر لی گئی ہے جبکہ اگر ضرورت پڑی تو رینجرز کو بھی مدد کیلئے طلب کیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ رات سے پہلے اگر مظاہرین نے خود ریڈزون خالی کرنے کا فیصلہ کر لیا تو انہیں روکا یا گرفتار نہیں کیا جائے گا اور خودبخود جانے والوں کو آزادانہ راستہ دیا جائے گا جس کے بعد رات کے وقت آپریشن کر کے مظاہرین کو ریڈزون سے نکالا جائے گا۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -