خودکش حملوں میں حکمران جماعت ملوث ہے‘ جمشید دستی

خودکش حملوں میں حکمران جماعت ملوث ہے‘ جمشید دستی

  

مظفرگڑھ( نامہ نگار )پاکستان عوامی راج پارٹی کے چیئرمین جمشید احمد دستی نے ایک بیان میں کہا کہ وزیراعلی کا لودھراں جلسہ ڈرامے بازی تھا،لودھراں خانیوال سٹرک کو دو رویہ (بقیہ نمبر29صفحہ7پر )

بنانے کے لئے بھرپور احتجاج کیا اور دھرنا دیا ،وزیر اعلی پنجاب پورے صوبے میں جلسے کر رہے ہیں مگر عوامی راج پارٹی کو جلسے کی اجازت نہیں دی جا رہی انہوں نے کہا کہ ملتان کی کرپٹ بیورو کریسی آزادی رائے اور سیاسی حقوق کو سلب کر رہی ہے وزیر اعلی جلسہ کریں تو کوئی سیکیورٹی مسئلہ نہیں ہوتا مگر اپوزیشن کی جماعت کو جلسے کی اجازت نہیں دی جاتی انہوں نے کہا کہ ہم بھی پاکستانی شہری ہیں اور میں قانون ساز اسمبلی ممبر ہوں اور میری سیاسی جماعت عوامی راج پارٹی کو پہلا سیاسی جلسہ کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت میری پارٹی کے جلسے سے خوفزدہ ہے کیونکہ میرے جماعت کے جلسے میں سرائیکی وسیب کی محرومیوں کی بات ہونی ہے سی پیک میں سرائیکی خطے کی چھ کراڑ عوام کا حق مانگا جانا ہے اور جلسے میں دو لاکھ سے زائد افراد کی شرکت متوقع ہے جسکی وجہ کمشنر ملتان اور ڈپٹی کمشنر ملتان جلسے کی اجازت نہیں دے رہے انہوں نے کہا کہ کمشنراور ڈی سی ملتان میاں برادران کے ذاتی ملازم بنے ہوئے ہیں اگر ملک میں نیشنل ایکشن پلان موجود ہے تو وزیر اعظم اور وزیر اعلی کو کس طرح جلسوں کی اجازت مل رہی ہے انہوں نے الزام عائد کیا کہ خود کش حملوں میں حکمران جماعت ملوث ہے جلسے کی اجازت نا ملنے اور انتظامیہ کی جانب سے رکاوٹیں ڈالنے کے معاملے پر چیف جسٹس آف پاکستان کو خط لکھ رہا ہوں تخت لاہور کو غریبوں کی جماعت پاکستان عوامی راج پارٹی سے اگر کوئی خوف نہیں ہے تو جلسے کی اجازت دیں ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -