سورج نے تڑپا دیا، واپڈا نے رلا دیا، 18،18 گھنٹے بجلی بند

سورج نے تڑپا دیا، واپڈا نے رلا دیا، 18،18 گھنٹے بجلی بند

  

ملتان،مظفرگڑھ، میلسی،عبدالحکیم،سخی سرور،راجن پور(سٹاف رپورٹر،نمائندگان)جنوبی پنجاب میں گرمی کی شدت میں اضافہ ہوتے ہی بجلی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 18گھنٹے تک پہنچ گیا،وولٹیج کی کمی،ٹرپنگ کی شکایات شہری تڑپتے رہے اس سلسلے میں ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق وفاقی حکومت کے دعووں کے بر عکس بجلی کی لوڈشیڈنگ کابحران جاری ہے بلکہ دورانیہ مزید بڑھ کر 18گھنٹے تک پہنچ گیا ہے ‘ وولٹیج کی کمی اور ٹرپنگ کی شکایات بھی بڑ ھ گئی ہیں ‘ وزارت پانی و بجلی کے حکام لوڈشیڈنگ کے متعلق اپنے وعدے پورے کرنے میں ناکام ہو گئے ہیں ‘ چند ماہ قبل وزیر اعظم نواز شریف نے اعلان کیا تھا کہ عوام کو بجلی کی فراہمی میں بہتری لائی جائے اور لوڈشیڈنگ کا دورانیہ نصف کر دیا جائے ‘ شہروں میں 6کی بجائے 3گھنٹے اور دیہی علاقوں میں 8کی بجائے 4گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جائے ‘ اس کے علاوہ وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی نے دورہ ملتان کے دوران تفاخر سے اعلان کیا کہ ملتان سمیت بڑے شہروں کو لوڈشیڈنگ فری کر دیا گیا ہے لیکن حکومتی اعلانات ‘ وعدے اور دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے اور نہ ہی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ نصف کرنے کے احکامات پر عملدرآمد ہو سکا اور نہ ہی ملتان سمیت بڑے شہر لوڈشیڈنگ فری ہو سکے ‘ الٹا شیڈول لوڈشیڈنگ کے ساتھ طویل شٹ ڈاؤن کا سلسلہ بھی جاری ہے.مظفرگڑھ سے نامہ نگار کے مطابق مظفرگڑھ ،خان گڑھ اور گر دو نواح میں ٹمپریچر میں اضافہ ہو گیا۔گرمی کی شدت ڈن میں بڑھ گئی ۔منگل کے روز مظفرگڑھ میں درجہ حرارت 36سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے۔میلسی سے سپیشل رپورٹر کے مطابق مارچ گرم ترین مہینہ ہے درجہ حرارت 36گریڈ سے تجاوز کرگیاسورج دن بھرآگ برساتارہا۔گرمی کی وجہ سے گلیاں اوربازارسنسان ہوگئے سورج غروب ہونے کے بعد درجہ حرارت کچھ کم ہواماہرین کے مطابق ماہ مارچ انسانی تاریخ میں گرم ترین مہینہ رہاگرمی کی وجہ ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ ۔بارش کی کمی درختوں کاکٹاؤاوردیگرکئی عوامل شامل ہیں جوگرمی کاباعث بن رہے ہیں ۔عبدالحکیم سے نمائندہ خصوصی،نامہ نگار کے مطابق عبدالحکیم اور پورے علاقہ میں گرمی شدت میں اضافہ ہونے سے اور لوڈشیڈنگ کے اوقات بڑھنے سے شہری پریشان ،پندرہ سے سولہ گھنٹے بجلی کی بندش ، شہری تڑپ اٹھے ،گرمی کے بڑھتے ہی مشروبات گنے کارس دو نمبر بوتلیں غیر معیاری قلفیاں اور آئس کریم فالودہ ، اور مشروبات مہنگے داموں گلیوں محلوں میں جا بجا فروخت ہونے سے بچے اور بڑے بیمار ہونے لگے ہیں۔دریں اثناء عبدالحکیم و گرد و نواح میں غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ کئی روز سے مسلسل جاری چوبیس گھنٹوں میں اٹھارہ گھنٹے لوڈ شیڈنگ کر کے شہریوں اذیت میں مبتلا کر رکھا ہے اورجس کی وجہ سے کاربارختم ہو کر رہ گیا ہے۔شہریوں نے کہا کہ اس مہنگائی کے دور میں رہی سہی کسر بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے کر رکھی ہے 90دن میں لوڈ شیڈنگ ختم کرنے والوں کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں۔سخی سرور سے نامہ نگار کے مطابق سخی سرور میں واپڈا کی طرف سے گرمیاں مکمل طور پر شروعب ہونے سے قبل ہی اپنی طرف سے لوڈشیڈنگ کرنے کے کارنامے شروع کردیئے ہیں ۔سخی سرور میں چودہ سے بارہ گھنٹے کی طویل غیر اعلانیہ لوڈ شید نگ جاری ہے۔عرس حضرت سخی سرور کی بھی جاری ہیں۔رات کے اقات بجلی جانے سے شہر اندھیر میں ڈوب جاتا ہے۔گرمی کی وجہ سے بھی شہر یوں کا بہت براحال ہے۔مر یضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اور زائرین کو سخت دشوار ی ہو رہی ہے۔جبکہ کاروباری زندگی میں مفلوج ہو کر رہ گئی ہیسٹون کریشرز ملکان کی کریشرز لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے بند ہونے لگی ہیں۔جس کی وجہ سے وہ انی کریشرز کو جنریٹر پر چلا رہے ہیں ،بعض نے تو بجلی نہ ہونے کی وجہ سے سٹون کریشرز بند کردی ۔باربار ٹرپنگ کی وجہ لاکھوں روپے کی مشینری جل جاتی ہے۔اس سے ما لکان کو نقصان ہورہاہے۔بجلی نہ ہونے سے بچوں کی تعلیمی سر گرمیاں بھی متاثر ہو رہی ہیں۔راجن پور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق ضلع راجن پور میں بھی موسم شدید گرم رہا راجن پور کادرجہ حرارت 42 ڈگری نوٹ کیا گیا گرمی کی شدت بڑھتے ہی مشروبات کی مانگ میں اضا فہ ہو گیا۔دریں اثناء موسم تبدیل ہوتے ہی ضلع راجن پور میں واپڈا کی طویل اور غیراعلا نیہ لوڈ شیڈ نگ کاسلسلہ شروع ہو گیا دن اور رات میں پندرہ گھنٹے کی لوڈ شیڈ نگ سے شہریوں کادن کاسکون اور رات کی نیند ختم ہو چکی ہے بجلی کی عدم دستیابی اور مچھروں کی یلغار سے شہریوں کاسکون بھی غارت ہو چکا ہے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -