اراضی سکینڈل، 3سابق سیشن ججوں نے ا نکوائری شروع کر دی

اراضی سکینڈل، 3سابق سیشن ججوں نے ا نکوائری شروع کر دی

  

لاہور(نامہ نگار)اراضی سکینڈل کی انکوائری کے لئے سیشن جج لاہور عابدحسین قریشی کی سربراہی میں 3سابق سیشن ججوں جاوید رشید محبوبی، ناصرعلی شاہ اور زواراحمد پر مشتمل کمیشن نے اپنی انکوائری شروع کردی ہے ،گزشتہ روز15متاثرین کے بیانات بھی قلمبند کرلئے گئے ہیں۔لاہور ہائی کورٹ نے اراضی سکینڈل کی انکوائری کے لئے ایک حاضرسروس اور 3ریٹائرڈ ججوں پر مشتمل کمشن ترتیب دیا ،تاکہ اراضی سکینڈل کے حوالے سے انکوائری کی جائے کہ کون لوگ اس ساری کارروائی میں ملوث ہیں کس طرح اس جعل سازی کا سدباب کیا جا سکتا ہے۔ سیشن کورٹ کمیٹی روم میں سیشن جج لاہور عابد حْسین قریشی کی سربراہی میں کمیشن نے سماعت کی اور متاثرین کے وکلا ء نے اراضی کی جعلی رجسٹریوں تیار ہونے سے متاثر ہونے والے افراد سے آگاہ کیا اس موقع پر اجلاس میں کافی تعداد میں متاثرین اور ان کے وکلا ء موجود تھے جن کے بیان قلمبند کئے گے ،کمشن نے مزید متاثرین کو طلبی کے سمن بھجوانے کی ہدایت کی ہے۔

اراضی کیس

مزید :

علاقائی -