سفارتکاروں کو ویزا میں اب ایک سال توسیع ملے گی:چودھری نثار

سفارتکاروں کو ویزا میں اب ایک سال توسیع ملے گی:چودھری نثار

  

اسلام آباد (آن لائن) وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ اب ویزوں کا اجراء پوشیدہ نہیں ہوگا، سفارتکاروں کو بھی ایک سال کی توسیع ملے گی۔ امیگریشن ڈیپارٹمنٹ کو ایف آئی اے سے الگ کرنے کا فیصلہ کیاہے اور وزیراعظم نے اجازت بھی دے دی ہے۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران کیا ۔ گزشتہ ادوار میں ایسے لوگ پکڑے گئے جن کے پاس ویزے نہیں تھے اور پھر ایسے افراد کو چھوڑ دیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ اسلام آبا‘ لاہور گوادر اور دیگر علاقوں سے بغیر ویزا پاکستان آنے والے لوگ پکڑے گئے پہلے لوگ ملی بھگت سے بغیر ویزے کے پاکستان میں داخل ہوجاتے تھے جبکہ گزشتہ دور میں ویزوں کے اجراء کا کوئی ریکارڈ بھی موجود نہیں ہے لیکن پاکستان میں اب ائیر لائنوں کو آزادی حاصل نہیں اور اب ملک ’’بنانا ریپبلک‘‘ نہیں رہا جبکہ ہم ایسا نظام بنا رہے ہیں کہ جو بھی حکومت آئے ویزے کے معاملے پر ہیر پھیر نہ کر سکے۔ انہوں نے کہاکہ اب کوئی غلط یا جعلی دستاویزات کے ذریعے پاکستان نہیں آسکتا ہے۔ ویزوں سے متعلق نوٹیفکیشن جب میرے علم میں آیا تو میں نے فوری منسوخ کیا۔ ویزے کے اختیار پر سفیر کو دیئے گئے اختیارات 2014 ء میں منسوخ کئے جبکہ بغیر ویزا لوگوں کو پاکستان لانے والی ائیر لائنوں پر 9 کروڑ روپے جرمانہ کر چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں آن لائن ویزا کا نظام متعارف کرا رہے ہین اور یہ آن لائن سسٹم جب آپریشنل ہوگا تو سب واضح ہوجائے گا۔ سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد سے متعلق وفاقی وزیر نے کہا کہ سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد کا سلسلہ کافی عرصے سے چل رہا ہے ۔ اس مواد کو روکنا میری نہیں پی ٹی اے کی ذمہ داری تھی لیکن میں اس معاملے کو مذہبی فریضہ کے طور پر دیکھ رہا ہوں۔ یہ صرف ہمارا نہیں پورے عالم اسلام کا مسئلہ ہے تمام مسلم ممالک کے سفیروں میں اس مسئلے پر اتفاق رائے موجود تھا۔ جبکہ گستاخانہ مواد کے معاملے پر وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی نے عرب لیگ کو خط لکھ دیا ہے انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد کے معاملے پر پیش رفت ہورہی ہے پہلے فیس بک والے جواب نہیں دیتے تھے لیکن اب وہ اپنا نمائندہ بھیج رہے ہیں جبکہ گزشتہ چند روز میں 45 ویب سائٹس کو بلاک کیا گیا ہے۔ چوہدری نثار نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اس معاملے پر اقوام متحدہ کی سطح پر پیش رفت ہو، ملیحہ لودھی نے اس معاملے پر یقین دہانی کرائی ہے کہ اس معاملہ پر پیش رفت ہوگئی۔ پاکستانی سفیر اعزاز چوہدری نے اس حوالے سے ہمارے تحفظات امریکی حکومت تک پہنچائے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اب اس مسئلے کا حل نکالیں گے اور سوشل میڈیا کو پابند بنائیں گے کہ اسلام کے خلاف غلاظت نہ پھیلائیں جبکہ فیس بک کی انتظامیہ نے بتایا ہے کہ انہوں نے 62 صفحات بلاک کردیئے ہیں ایک سوال کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہ اکہ زرداری صاحب چکری میں جلسہ کرنے آئیں گے تو انہیں سکیورٹی فراہم کریں گے اور اپنے گھر سے چائے بھی پلاؤں گا۔

چودھری نثار

اسلام آباد(اے این این) امریکیوں کو ویزوں کا اختیار شیری رحمان کو بھی حاصل رہا،اختیار ات 2014میں چودھری نثار نے واپس کئے ،وزیر اعظم نواز شریف کی زبانی ہدایت اور پھر چودھری نثار کے حکم پر وزارت داخلہ گیلانی دور کے متنازعہ خط سے دستبردار ہوئی ۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی جانب سے امریکا میں سابق سفیر حسین حقانی کو ویزے جاری کرنے کے اختیارات دینے کا معمہ حل ہوگیا۔وفاقی وزیر داخلہ کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں متنازع خط موضوع بحث رہا اور اجلاس میں انکشاف کیا گیا کہ سابق وزیراعظم کی جانب سے لکھے گئے خط کو موجودہ حکومت نے 2014میں واپس لیا تھا۔ایک سینئر عہدیدار نے تصدیق کی کہ وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ہدایت پر وزارت داخلہ مذکورہ خط سے دستبردار ہوگئی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ حسین حقانی کی جانب سے خلاف ضابطہ درخواست گزاروں کے کوائف کی تصدیق کیے بغیر ہزاروں امریکیوں کو ویزے جاری کیے گئے۔ایک سوال پر عہدیدارنے کہا کہ وزیراعظم کے زبانی احکامات پر اختیارات کو ختم کردیا گیا ہے۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق حسین حقانی کے بعد شیری رحمان کو سفیر بنایا گیا تب یہ اختیارات واپس نہیں لئے گئے تھے اور یہ اختیارت شیری رحمن کو بھی حاصل رہے ۔تاہم یہ واضح نہیں کہ ان اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے شیری رحمان نے بھی حسین حقانی کی طرح ویزے جاری کئے تھے یا نہیں ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -