چارسدہ میں واپڈا کیخلاف عوامی بغاوت کیلئے تیاریاں شروع

چارسدہ میں واپڈا کیخلاف عوامی بغاوت کیلئے تیاریاں شروع

  

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ میں واپڈا کے خلاف عوامی بغاوت کیلئے تیاریاں شروع۔نماز جمعہ کے بعد خواتین ، بچے ، بوڑھے اور جوان موٹر وے بند کرکے خیمے لگائینگے ۔ عوامی نیشنل پارٹی ، قومی وطن پارٹی ، جمعیت علمائے اسلام ، جماعت اسلامی ، تحریک انصاف ، متحدہ شاپ کیپرز فیڈریشن ، تاجر اتحاد اور دیگر تنظیموں نے واپڈا کے خلاف عوامی بغاوت کا ساتھ دینے کا اعلان کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق ضلع چارسدہ میں 22/20گھنٹے کی غیر اعلانیہ ناروا لوڈشیڈنگ کے خلاف چارسدہ میں عوامی احتجاج کیلئے تیاریاں شروع کی گئی۔احتجاج کے پہلے مرحلے میں خواتین ، بڑے ، بوڑھے اور جوان اسلام آباد ،لاہور اور پشاور موٹر وے کو بند کرکے موٹروے پر خیمے لگاکر نئے انداز میں احتجاج شروع کرینگے ۔ اس حوالے سے عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدر بیرسٹر ارشد عبداللہ، قومی وطن پارٹی کے صدر ایم پی اے ارشد خان عمر زئی ، جمعیت علمائے اسلام کے ضلعی امیر مولانا محمد ہاشم خان ، جماعت اسلامی کے ضلعی امیر محمد ریاض خان ، تحریک انصاف چارسدہ کے صدر حاجی ظفر خان ، متحدہ شاپ کیپرز فیڈریشن کے مرکزی صدر حکیم اللہ فوجی ، تاجر اتحاد کے مرکزی صدر حاجی افتخار حسین صراف اور دیگر نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے واشگاف الفاظ میں کہا کہ 22/20 گھنٹے کی بجلی لوڈشیڈنگ نے عوام کو آج صرف بغاوت پر مجبور کیا ہے اور یہ سلسلہ نہ رکا تو عوام اسلحہ اٹھانے سے بھی دریغ نہیں کرینگے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جمعہ کے روزتمام سیاسی پارٹیاں اور دیگر تنظیمیں واپڈا کے خلاف احتجاج اور بغاوت میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینگے کیونکہ یہ عوام کا مسئلہ ہے او ر تمام پارٹیاں عوامی سیاست کی دعویدار ہیں ۔انہوں نے کہا وزیر اعظم کے اعلانات کے باوجود ایکسین چارسدہ نے ظلم اور بر بریت کا بازار گرم کر کے عوام کو لو ڈ شیڈنگ کے غذاب میں مبتلا کر رکھا ہے ۔ انہوں نے چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ یحیٰ آفریدی اور ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج منیرہ عباسی سے مطالبہ کیا کہ عوامی بغاوت کا نوٹس لیں اور اس حوالے سے جنگی بنیادوں پر سو موٹو ایکشن لیں ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -