پشاور ،لین دین تنازعہ ،فریقین کے مابین راضی نامہ ہوگیا

پشاور ،لین دین تنازعہ ،فریقین کے مابین راضی نامہ ہوگیا

  

پشاور(کرائمز رپورٹر)ڈی آرسی گلبہار سٹی کمیٹی نے فریقین کے مابین عرصہ دراز سے جاری ایک کروڑ 63 لاکھ روپے کا تنازعہ حل کراتے ہوئے رقم کی ا دائیگی کے بعد فریقین میں راضی نامہ طے کرادیا جبکہ 2014 سے اب تک ڈی آرسی میں جمع کرائے جانے و الے 2279 کیسوں میں سے 1758 کیسز پرامن طریقہ سے حل کراکے 364 کیسوں میں فریقین کے خلاف مقدمات درج کرلیے گئے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز گلبہار ڈی آر سی کے ممبران آفتاب اقبال ، ہارون صابر اورکنول ایڈوکیٹ نے فریقین وحید خان اوراختر حسین کے مابین چھ سال سے جاری ایک کروڑ 63 لاکھ روپے کی رقم کا تنازعہ حل کرایا دیا کمیٹی ممبران نے رقم کی ادائیگی کے بدلے دو مکانات اورچار لاکھ روپے کی رقم مخالف فریق کے حوالے کردی جس کے بعد کمیٹی نے دونوں فریقین کے درمیان راضی نامہ طے کرادیا اسی طرح ڈی آر سی گلبہار کے ممبران ملک پرویز الہی ، انور خان اورفخر ایڈوکیٹ نے فریقین حسن محمود یوسفزئی اورطارق علی باچہ کے مابین پانچ لاکھ روپے کی رقم کا تنازعہ اورفریقین توحید پرویز اورناصر خان کے مابین جاری 80 لاکھ روپے کی رقم کا تنازعہ حل کراتے ہوئے دونوں فریقین کو ان کی رقوم کی ادائیگی اوردیگر رقم کی ادائیگی کیلئے فیصلہ کراکے دونوں فریقین کے مابین راضی نامے طے کراکے ان میں صلح صفائی کرادی ۔ڈی آر سی گلبہار کی فعالیت اوربہترین کارکردگی کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ 2014 سے اب تک ڈی آر سی میں مختلف نوعیت کے تنازعات پر مبنی 2279 کیسز جمع کرائے گئے تھے جس میں ڈی آر سی ممبران نے انتھک محنت اورلگن کی بدولت 1758 کیسوں میں فریقین کے مابین تنازعات کو پرامن طریقہ سے حل کرتے ہوئے ان کے مابین راضی نامے طے کرادیے جبکہ ڈی آر سی کے فیصلے سے روگردانی کرنے والے 364 کیسوں میں فریقین کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے بھی احکامات جاری کیے گئے ہیں ڈی آر سی گلبہار علاقائی عوام کے مسائل اوران کے تنازعات کے حل کیلئے دن رات کوشاں ہے جس کی وجہ سے علاقائی عوام میں ڈی آر سی کی خدمات مقبول ہورہی ہیں اوروہ ا پنے تنازعات تھانہ کچہری میں لے جانے کی بجائے ڈی آر سی کے زریعے حل کرانے میں دلچسپی لے رہے ہیں ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -