پاکستان میں پختونوں سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے :حیدر ہوتی

پاکستان میں پختونوں سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے :حیدر ہوتی

  

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدرسابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوامیرحیدرخان ہوتی نے کہاہے کہ جب تک پختونوں کے فیصلے میں پنجاب میں ہونگے اس وقت تک پختون قوم کی ترقی نہیں کرسکتی صوبے میں ترقی صرف اورصرف اخباری بیانات تک محدود ہے حالانکہ زمینی حقائق اس کے برعکس ہے کیونکہ پرویزخٹک کی مجبوری عمران خان اورعمران خان کی مجبوری ہے ہماراکوئی بھی مجبوری نہیں ہے قبائل کوخیبرپختونخوامیں ضم کیاجائے تاکہ پورے پختونخواکے عوام ایک پلیٹ فارم پرمتحدہوجائیں ان خیالات کااظہارامیرحیدرخان ہوتی نے گزشتہ روزسخاکوٹ میں ایک بڑے شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب سے ضلعی صدرشفیع اللہ خان اورجنرل سیکرٹری اعجازعلی خان وغیرہ نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پرمختلف سیاسی پارٹیوں کے سینکڑوں کارکنان مستعفی ہوکرعوامی نیشنل پارٹی میں شامل ہوگئے ۔امیرحیدرخان ہوتی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان میں پختونوں کے ساتھ سوتیلی ماں جیساسلوک کیاجارہاہے لاہورسے کراچی تک موٹروے بن رہی ہے مگرپشاورسے سوات تک نہیں پنجاب میں روزگارکیلئے کارخانے بن رہی ہے مگرخیبرپختونخوامیں جوہم کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کریں گے ۔انہوں نے کہاکہ پنجاب میں لوڈشیڈنگ کوکم کرنے کیلئے کوئلہ سے بجلی پیداکررہی ہے مگرپختونخوامیں قدرتی حسن ا ورسائل اورپانی سے مالامال پختونوں کیلئے نہیں بناسکتی کیایہ پختونوں کے ساتھ سراسرظلم اورناانصافی نہیں ہے؟انہوں نے کہاکہ کارکن پارٹی کاقیتمی سرمایہ ہے کارکنان کے ساتھ ملکرگھرگھرتک باچاخان کاپیغام پہنچانے کے لئے اپنے تمام ترصلاحتیوں کوبروئے کارلاکرکسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔انہوں نے کہاکہ پارٹی کے قائدین نے مجھ پربھی اعتماد کرکے صوبائی صدرمنتخب کرکے بھاری ذمداری عائد ہے اب کارکنوں سمیت یہ ذمداری احسن طریقے سے سرانجام دیں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -