ن لیگ کے ساتھ ڈیل نہیں ہوئی،عمران خان غلط فہمی میں مبتلا ہیں، ملک میں کرپشن پکڑنے کے لئے لارڈ میکالے کا قانون چل رہا ہے: لطیف کھوسہ

ن لیگ کے ساتھ ڈیل نہیں ہوئی،عمران خان غلط فہمی میں مبتلا ہیں، ملک میں کرپشن ...
ن لیگ کے ساتھ ڈیل نہیں ہوئی،عمران خان غلط فہمی میں مبتلا ہیں، ملک میں کرپشن پکڑنے کے لئے لارڈ میکالے کا قانون چل رہا ہے: لطیف کھوسہ

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما ءلطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ عمران خان اپنی غلطی فہمی کو دور کریں پاکستان پیپلز پارٹی او ر ن لیگ کے درمیان کوئی خفیہ ڈیل نہیں ہوئی ہے۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم کا کیس حکومتی بدنیتی پر مبنی تھا۔ کرپشن کو پکڑنے کے لئے ملک میں کوئی قانون موجود نہیں، لارڈ میکالے کے دور کے قوانین اس ملک میں نافذ ہیں۔ انہی قوانین کی وجہ سے مجرم آزادانہ گھومتے ہیں ۔

نوازشریف کابہت جلد صفایا ہونیوالا ہے ، دسمبر سے پہلے ہی گھر چلے جائینگے:سردار لطیف کھوسہ کا دعویٰ

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے لطیف کھوسہ کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن نے پیپلز پارٹی کے ساتھ کوئی رعایت نہیں برتی۔ ایان علی کو عدالتوں میں خوار کیا گیا۔ اس نے 2پلاٹس کی فروخت سے خطیر رقم لی وہ بے گناہ تھی اسی لئے عدالت نے اس کی رہائی کا حکم نامہ جاری کیا۔ حج کرپشن کیس کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ حج کرپشن کیس پر اس وقت کے چیف جسٹس افتخار چوہدری نے نوٹس لیا اور خود ہی اسے مانیٹر کیا، وزیر داخلہ نے پیپلز پارٹی کو عدالتوں میں گھمایا ہے۔ ڈاکٹر عاصم کو قانون کے تحت ضمانت ملی ہے، وزارت داخلہ، ریاست پاکستان اور وزارت داخلہ کی جانب سے ڈاکٹر عاصم کی بھرپور مخالفت کی گئی۔ جس طرح رینجرز نے ڈاکٹر عاصم کو گرفتار کیا اور انہوں پر جیل میں جو گزری وہ ایک کربناک صورت حال ہے۔

1992اور2001 کے قوانین کے تحت غیرملکی کرنسی اکاونٹس کو مکمل تحفظ حاصل ،بیمار زہن کے لوگ ملک کا امیج خراب کرتے ہیں:اسحاق ڈار

رہنماءپیپلز پارٹی کا مزید کہنا تھا کہ کرپشن کو پکڑنے کے لئے ملک میں کوئی قانون موجود نہیں، لارڈ میکالے کے دور کے قوانین اس ملک میں نافذ ہیں۔ انہی قوانین کی وجہ سے مجرم آزادانہ گھومتے ہیں ۔ مسلم لیگ (ن) نے اپنے چار سالوں میں کوئی قابل ذکر قانون سازی نہیں کی۔ سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہے لیکن وفاق نے سندھ پر رینجرز کو مسلط کردیا ہے جس کی وجہ سے انہیں قانون سازی کا موقع نہیں ملتا۔

مزید :

قومی -