افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلا امن کی جانب ایک قدم ہے: ایران

افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلا امن کی جانب ایک قدم ہے: ایران
افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلا امن کی جانب ایک قدم ہے: ایران

  


تہران(آئی این پی)ایران نے کہا ہے کہ افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلا امن کی جانب ایک قدم ہے، افغانستان میں بد امنی کی وجہ غیر ملکی فوجیوں کی موجودگی ہے،ایران افغانستان میں امن و امان برقرارکھنے کے لئے ہر قسم کا تعاون اور امداد فراہم کرے گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیر خارجہ اور اعلی سفارتکارسید عباس عراقچی نے تاشقند میں افغانستان سے متعلق امن کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں نا امنی اس ملک میں غیر ملکی فوجیوں کی موجودگی کی وجہ سے ہے۔سید عباس عراقچی نے اس جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ افغانستان میں فوجی طریقے سے مسئلے کو حل کرنے کی کوششیں ناکامی سے دوچار ہوئیں افغان صدر اشرف غنی کی جانب سے مسلح گروہوں کو امن مذاکرات کی دعوت دینے کا خیر مقدم کیا۔ایران کے نائب وزیر خارجہ نے افغانستان میں امن و امان کی برقراری کے لئے ہر قسم کے تعاون اور امداد کے لئے ایران کی آمادگی کا اعلان کیا۔

واضح رہے کہ ازبکستان کے دارالحکومت تاشقند میں 2 روزہ افغان امن عمل کانفرنس کل سے شروع ہوئی ہے۔ کانفرنس کی سربراہی ازبک اور افغان حکام کر رہے ہیں۔ کانفرنس میں ایران، پاکستان، سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، ہندوستان، ترکی، چین، روس، امریکہ، اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے نمائندے شریک ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...